آذاد کشمیر کا ایک اخبار بھی بانگ سحر کے نقش قدم پر، مجسٹریٹ کی جانب سے مجادلہ کے چیف ایڈیٹر کو آج جاری کئے گئے نوٹس میں “سروے کی اشاعت” پر حاضری کا حکم۔

اسلام آباد( پ ر) گزشتہ دنوں راولاکوٹ سے شائع ہونے والے اخبار روزنامہ مجادلہ کو ضلعی انتظامیہ نے غیر قانونی قرار دیکر اس کی اشاعت روک کر اخبار کے دفتر کو سیل کر دیا تھا ۔اُس وقت مقامی ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کی جانب سے جاری حکم نامے میں اخبار کے غیر قانونی ہونے کی کوئی وجہ بیان نہیں کی گئی تاہم آج مقامی مجسٹریٹ کی جانب سے اس اخبار کو ایک” متنازعہ” رپورٹ شائع کرنے کے باعث چیف ایڈیٹر کو حاضر ہونے کا حکم نامہ جاری کیا ہے،یاد رہے اس اخبار نے۔ برطانیہ میں مقیم ایک کشمیری نژاد صحافی کی تیار کردہ رپورٹ کی اشاعت کی تھی جس کے مطابق مطابق آزاد کشمیر کے 70 فیصد شہری کشمیر کی علیحدگی(خودمختاری) کے حامی ہیں۔

بلکل یہی صورت حال گلگت بلتستان میں روزنامہ بانگ سحر کے ساتھ کیا گیا ہے اور تاحال چیف ایڈیٹر بانگ سحر سلاخوں کے پیچھے ہیں لیکن ڈر اور خوف کی وجہ سے گلگت بلتستان کے صحافی برادری کی ہمت نہیں ہورہی کہ انسانیت کے ناطے ڈی جے مٹھل کی رہائی کیلئے کوئی حکمت عملی طے کریں۔

متنازعہ علاقوں میں اظہار رائے کی آذادی پر قدعن میں مسلسل اضافہ پریشان کُن اور انسانی حقوق کے تنظیوں کی مکمل خاموشی لمحہ فکریہ ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc