محکمہ پولیس اور LGRD میں موجود کالی بھیڑوں کو بھی احتساب کے شکنجے میں لانا ضروری ہے۔

گلگت (ڈسٹرک رپورٹر) قومی احتساب بیورو کی جانب سے گلگت بلتستان کے سرکاری اداروں میں لوٹ مار مچانے والوں کے خلاف کاروائی کی منظوری کے بعد گلگت بلتستان کے تمام سرکاری اداروں میں کھلبلی مچ گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق دہائیوں سے کرپشن اور لوٹ مار میں ملوث حاضر سروس اور ریٹائرڈ افسران نے ناجائز مال دولت کو قانونی تحفظ فراہم کرنے کیلئے قانونی ماہرین سے مشاورت شروع کردی ہے۔ محکمہ نیب کی ایکشن پر سوشل میڈیا پر بھی کرپٹ عناصر کے خلاف ایکشن کو عوام کی جانب سے خوب سراہا جارہا ہے۔ ذرائع کے مطابق ماضی محکمہ پولیس اور ایکسائز میں غیرقانونی بھرتیوں اور این سی پی گاڑیوں کی رجسٹریشن اور سرحد پار کرانے کے جرم میں ملوث حاضر سروس اور ریٹائرڈ آفسران جنہوں نے گلگت اور سکردو میں کرڑوں کی پراپرٹیاں بنائی ہیں، نیب کے ایکشن سے بہت ذیادہ پریشان ہیں۔ اسی طرح محکمہ ایل جی آر ڈی جہاں دیہی ترقی کے نام پر آج تک عوامی پیسوں کو کاغذی کاروائی کےذریعے ہڑپ کرنے والوں نے نیب سے بچنے کیلئے پیروں اور فقیروں سے رجوع کرنا شروع کیا ہے۔ سوشل میڈیا پر عوامی حلقوں کی جانب سے ورکس اور زراعت کی طرح دوسرے مرحلے میں پولیس ایکسائز اور LGRD کے سابق اور موجودہ افسران کے خلاف انکوائری کیلئے مطالبہ زور پکڑتا جارہا ہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc