سعدیہ دانش نے نون لیگ سے تعلق رکھنے والے ممبران قانون ساز اسمبلی کو بھیگی بلی قرار دے دیا۔

اسلام آباد (پ۔ر)پیپلزپارٹی گلگت بلتستان کی صوبائی سکریٹری اطلاعات سعدیہ دانش نے کہا ہے کہ آئینی حقوق کے حوالے سے صوبائی وزیر کی باتیں سانپ گزرنے کے بعد لکیر پیٹنے سے زیادہ کچھ نہیں۔آئینی سفارشات مرتب کرتے وقت وزیراعظم اور وزیر اعلیٰ کے سامنے اس اہم ترین معاملے میں بھیگی بلی بنے رہنے والوں کی وفاقی حکومت کے خاتمے کے قریب اسطرح کی جذباتی تقاریر منافقت سے زیادہ کچھ نہیں۔وقت اور حالات کے مطابق اپنا روپ دھارنے والے بہروپیوں کے چہرے بے نقاب ہو چکے ہیں۔ قومی اسمبلی کے سامنے دھرنا دینے کی باتیں کرنے والے پہلے وزیر اعلیٰ کے سامنے اختلاف رائے کی ہمت پیدا کریں۔جو لوگ سو افراد بھی جمع نہیں کر سکتے وہ کس طرح عوامی نمائندگی کا دعویٰ کرتے ہیں۔بے وقت کی راگنی بجانے سے بہتر ہے اپنی غلطیوں کا اعتراف کریں اگر یہ لوگ گلگت بلتستان سے اتنے ہی مخلص ہیں تو وزیر اعلیٰ کے بیان پر ان سے معافی مانگنے یا استعفیٰ دینے کا مطالبہ کریں نہیں تو ڈرامے کرنے کے بجائے خود استعفیٰ دے کر گھر چلے جائیں۔ گلگت بلتستان کے عوام کو اب اسطرح بے وقوف نہیں بنایا جا سکتا ہے ۔ڈھائی سال تک جو لوگ گلگت بلتستان کے عوام کے بجائے ذاتی مفادات کی خاطر وزیر اعلی کے ترجمان بنے رہے آج ہوا کا رخ بدلتے دیکھ کر عوامی ہمدردیاں سمیٹنے کی خاطر گرگٹ کی طرح رنگ بدل رہے ہیں ۔آج عوام کے خیر خواہ بننے کی کوشش کرنے والے بتائیں کہ جب وزیراعلیٰ گلگت بلتستان کے بجائے نااہل حکمرانوں کی نمائندگی کر رہے تھے جب خالصہ سرکار کےنام پر عوامی زمینوں پر قبضے کئے جارہے تھے جب کرپشن،اقرباء پروری،لاقانونیت اور ٹھیکوں کی بندربانٹ کا دور دورہ تھا تب انکی زبان پر کیوں تالے لگے ہوئے تھے۔ اب پانی سر کے اوپر سے گزر چکا ہے اور جذباتی تقریروں سے عوام کے زخموں پر مرہم نہیں رکھا جاسکتا بلکہ آنے والے انتخابات میں گلگت بلتستان کے باشعور عوام ووٹ کی طاقت سے اپنے ساتھ کھلواڑ کرنے والوں کو حرف غلط کی طرح مٹا دینگے

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc