حکومت خالصہ سرکار کے نام پر گلگت بلتستان کو بھی فلسطین بنانے کی مذموم کوشش کر رہے ہیں۔امام جمعہ کھرمنگ

کھرمنگ (قاسم قاسمی) گلگت بلتستان صوبائی حکومت جی بی میں عوامی ملکیتی زمینوں کو خالصہ سرکار قرار دے کر مفت ہتھیانا چاہتے ہیں اور گلگت بلتستان کو بھی فلسطین بنانے کی مذموم کوشش کر رہے ہے ان باتوں کا اظہار امام جمعہ والجماعت کھرمنگ باغیچہ شیخ اکبر رجائی نے کیا ان کا مذید کہنا تھا کہ حالیہ دنوں کتپناہ میں ہوٹل کی عمارت کو گرا کر ظلم و بربریت کی نئی داستانیں رقم کی ہیں اس اقدام سے گلگت بلتستان کی عوام کو سرکار کے مذموم مقاصد پر یقین ہوا ہے اسی طرح ن لیگی حکومت ضلع کھرمنگ کے ہیڈ کوارٹر کو اب تک لٹکا کر رکھنے کا اصل مقصد بھی یہی ہے کہ وہ کھرمنگ میں عوامی ملکیتی زمینوں پر مفت قبضہ کرنے کے لیے ایک متنازعہ زمین کو بار بار فزیبل قرار دیے جارہے ہیں صوبائی حکومت پری پلینگ کے مطابق فریقین کو آپس میں لڑا کر زمین کو خالصہ سرکار قرار دے سکیں جب کہ یہ زمین تقریبا پینتیس سالوں سے عدالت میں ہیں حکومت کھرمنگ کے اس زمین کو خالصہ اس لئے قرار دینا چاھتے ہیں تاکہ اسی کو بنیاد بنا کر پورے گلگت بلتستان کے دیگر اضلاع میں بھی ڈوگرہ قانون کے تحت زمینوں کو ہتھیا سکیں حکومت ہوش کا ناخون لیں اور ڈوگرا قانون گلگت بلتستان پر لاگو کرنے سے گریز کریں بصورت دیگر جس طرح صوبائی حکومت گلگت بلتستان میں عوام کی ملکیتی زمینوں کو خالصہ قرار دے کر قبضہ مہم شروع کرنا چاہ رہے ہیں اس طرح اس قبضہ مہم کے خلاف عوام کو ایک بار پھر سڑکوں پر آنا ہو گا تاکہ ایک بار پھر عوامی طاقت سے اس ظالمانہ اقدام کو بھی ملامیٹ کر سکیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc