ضلع شگر مسائلستان بن گئے،عوامی مسائل حل نہ ہونے کی وجہ سے سیاسی وفادریاں تبدیل ہونے کا خدشہ۔

شگر(پ ر)منتخب نمائندے عوامی مسائل پرتوجہ دیں ورنہ وفاداریاں بدلنے میں دیرنہیں لگیں گے،ہمیں منظم طور پرخوداعتمادی کیساتھ حقوق کیلئے جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے ۔جب تک ہم اتفاق ہوکر حقوق کی جنگ نہیں لڑیں گے کوئی ہمیں حقوق نہیں دلائیں گے، ان خیالات کا ظہارنوجوانا ن تسرمقیم لاہورکا ایک اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے فرام علی گیلدے،شیخ یاسین حافظی ودیگر نے کہا ۔رنوجوانا ن تسرمقیم لاہورکا ایک اہم اجلاس احمد شگری کی سربراہی میں ماڈل ٹاون لاہورمیں منعقد ہوا۔اجلاس میں مہمان خصوصی سماجی رہنما فرمان علی گیلدے اورمولانا یاسین حافظی سمیت نوجوانوں کی کثیر تعدادنے شرکت کی ۔ اجلاس میں تسر کی موجودہ حالت پر اظہار خیال کیا گیانوجوانوں کی سربراہی کرتے ہوئے احمدعباس شگری کا کہنا تھا تسر کو اس وقت مسائل نے چاروں طرف سے گھیرا ہواہے ا س دور میں بھی پائپ لائن کی عدم دستیابی کے باعث لوگ گدیلے پانی استعمال کرنے پر مجبورہے،جسکے سبب مختلف بیماریاں پھیلانے کا خدشہ ہے،روڈ کی حالت نا گفتہ بہ ہے۔ہسپتال میں ڈاکٹرکی عدم فراہمی کے باعث مریضوں کو مشکلات کا سامنا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ منتخب نمائندے آئندہ الیکشن تک عوامی مسائل کا حل یقینی بنائیں بصورت دیگر وفاداریاں بدلنے میں دیرنہیں لگیں گے۔اجلا س کے صدریاسین حافظی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تسر کی ترقی کیلئے ہمیں آپس میں مل بیٹھ کراتحاد واتفاق سے کام کرنے کی ضرورت ہے،جب تک ہم آپس میں یکجا ہوکر اپنے حقوق کی جنگ نہیں لڑیں گے کوئی ہمیں حقوق نہیں دلائیں گے،اجلاس سے مہمان خصوصی فرمان علی گیلدے کا خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہمارے معاشرے میں مسائل تو بہت ہے اس کیلئے ہمیں ایک دوسرے کے ساتھ چل کرحل کرانے کی ضرورت ہے،ان کا مزید کہنا تھا کہ ہمیں منظم طورپر یک جاں ہوکر خوداعتمادی کیساتھ حقوق کیلئے جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے۔نوجوانان تسر نے اپنی دعوت پر اجلاس میں شرکت کرنے پر فرمان علی گیلدے کا خصوصی شکریہ بھی ادا کیا۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc