عوامی ایکشن کمیٹی کا اہم اجلاس، مسائل حل نہ ہونے کی صورت میں عوام کو دوبارہ سڑکوں پر نکالنے کی دھمکی۔

گلگت (ڈسٹرک رپورٹر) عوامی ایکشن کمیٹی گلگت بلتستان کی ایگزیکٹیو کمیٹی کا اہم اجلاس جماعت اسلامی گلگت کی دفتر میں منعقد ہوا،اجلاس میں تمام سیاسی ،مذہبی،سماجی تنظیموں اور انجمنوں کے نمائندوں حاجی ابراہیم فدا حسین مسعود الرحمن راجہ میر نواز جہانذیب انقلابی امتیاز گلگتی محمد فاروق حسین شاہ اظہر علی شاہ حاجی غلام حسین نے شرکت کی،اجلاس کی صدارت عوامی ایکشن کمیٹی کے چیئرمین مولاناسلطان رئیس نے کی،اجلاس میں گلگت بلتستان کی موجودہ ائینی اصلاحاتی کمیٹی کے فیصلوں اور بجلی کے بحران پرغورخوص کیا گیا،اجلاس میں متفقہ طور پر مندرجہ ذیل قرار داد اتفاق رائے سے منظور کرتے ہوئے فوری طور پر تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا،قرار داد میں کہاگیا کہ ممکنہ دیئے جانے والے آئینی سیٹ اپ کیسفارشات کو پبلک کیا جائے،متوقع سیٹ اپ سے قبل مذکورہ ائینی سفارشات پر تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جائے ،تما م اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لئے بغیر کوئی بھی پیکج قابل قبول نہیں ہوگا اجلاس میں پریشان کن لوڈشیڈنگ کے متعلق نیب کے کردارکو افسوس ناک قرار دیتے ہوئے کہا گیا کہ ،نیب فوری طور پر محکمہ برقیات کے تمام ملازمین کے جانچ پڑتال کرے اور محکمے کا قبلہ درست کیا جائے اور ایسے اعلی افیسران کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جائے جن کی غلط سائٹ سلیکشن کی وجہ سے آج جی بی اندھیرے میں ڈوبا ہوا ہے اور بجلی کے منصوبوں کوغیر موضوع مقامات پر لگائے جانے پرتحقیقات کے فوری طور پر آغاز کرے تاکہ ائندہ کوئی بھی اس طرح نہ کرسکے ائندہ تمام منصوبے دریاوں پر لگائے جائے تاکہ پانی کا کمی کا بہانہ ہمیشہ کے لئے ختم ہوسکے گلگت بلتستان میں کسی بھی قسم کا ائینی سیٹ اپ دینے سے قبل یہاں کے عوام کو انصاف کے فراہمی کے لئے اعلی عدلیہ تک رسائی دی جائے تاکہ یہاں پر انصاف کا بول بالہ ہو۔ گلگت بلتستان کے عوام کو تما م اختیارات اور تبدیلوں سے قبل سپریم کورٹ تک رسائی ممکن بنایا جائے اجلاس میں گزشتہ ٹیکسزکے خاتمے کے نوٹیفیکیشن کے بعد وہ تمام موبائل کمپنیاں جو غیر قانونی ٹیکسزکا وصولی جار ی رکھے ہوئے ہیں انکے خلاف تحریک کا بہت جلد آغاز کیا جائے گا۔۔گزشتہ مہینے حکومت اور عوامی ایکشن کمیٹی کے کامیاب مزاکرات کے بعد تمام قسم کے ٹیکسز گلگت بلتستان سے ختم کئے جا چکے ہیں مگر ابھی تک کچھ کمپنیاں غیر قانونی ٹیکسز عوام سے لے رہی ہیں لہذا فوری طور پر ان موبائل کمپنیوں کو روکا جائے ،اجلاس میں لوڈشیڈنگ کے روک تھام کیلئے فوری طور پرحکومت اقدامات کرے اس سلسلے میں ہینزل پاور پروجیکٹ سکارکوئی چھلمش داس سمیت پھنڈر و دیگر پروجیکٹ پر فوری طور پر کام شروع کیا جائے تاکہ گلگت بلتستان سے مکمل لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ہوسکے۔جبکہ ہسپتال ،مساجد ،تھانوں اور ریسکیو اداروں کے علاوہ تمام سپیشل لائینوں اور ٹرانسفارمرز کا خاتمہ کیا جائے، اور برابری کے بنیاد پر تمام شہریوں کو بجلی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے بصورت دیگر احتجاج کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc