ضلع نگر میں بجلی نہ ہونے کی وجہ سے عوام کو شدید پریشانی،احتجاج کی تیاریاں شروع۔

نگر ( بیورو رپورٹ) دو مہینے گزرگئے عوام کو بجلی دی گئی نہ چینل پر کام مکمل کر لیا گیا اور نہ ہی چھلت پاور ہاؤس کی مشینیں ٹھیک کرا کر لاہور سے واپس چھلت پہنچا دی گئیں،آخر عوام کا صبر جواب دے ہی گیا، مین علمدار چوک چھلت پر عوام کا علامتی احتجاج شروع،عوام نے ٹائر جلاکر مین علمدار چوک کو ہر قسم کی ٹریفک کے بند کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق نگر کے مین سٹی ایریاز،چھلت بالا،چھلت پائین،سونیکوٹ ،اکبر آباد،رابٹ بالا،رابٹ پائین،چھپروٹ ،گئے با اورمین کوٹ میں بیس ہزار سے زائد آبادی کو پچھلے دو مہینوں سے رات کے اوقات میں ایک سیکنڈ تک کی بھی بجلی نہیں دی گئی حالانکہ حلقہ چار نگر میں دو بجلی گھروں،بڈہلس پاور ہاوس اور مناپن دو میگا واٹ پاور ہاوس سے بجلی کی مخصوص علاقوں کو فراوانی مسلسل جاری ہے۔ عوام علاقہ کا مطالبہ ہے کہ ہماری صبر اور خاموشی کا فائدہ لیتے ہوئے پچھلے دو ماہ سے دونوں بجلی گھروں سے بجلی نہ دے کر ہمارے ساتھ سوتیلی ماں کا جیسا سلوک روا رکھا گیاہے۔ محکمہء برقیات بتائے کہ کیا مناپن اور بڈہ لس پاور ہاؤسز ایک مخصوص علاقے میں بجلی دینے کے لئے بنائے گئے ہیں یا حلقے کی پوری عوام کو یکساں بجلی فراہم کرنے کے لئے تعمیر کیا گیا ہے۔ آخرکیا وجہ ہے کہ ہمیں ان بجلی گھروں سے رات کے اوقات میں بجلی نہیں دی گئی اور اب تک نہیں دی جارہی ہے۔ ہم آج علامتی طور پر احتجاج کر رہے ہیں کل کے بعد ابتدائی طور پر مین سٹی ایریاء میں شٹر ڈاؤن ہڑتال اور اگر بجلی نہیں دی گئی تو ضلعی ہیڈ کوارٹر کے سامنے اس وقت جب تک ہمارے علاقوں کو ان دونوں پاور ہاؤسز سے بجلی فراہم نہ کی جائے تب تک احتجاج جاری رکھی جائے گے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc