ان افراد کو پھانسی چڑھا دو،سپاہ سالار نے اہم حکم نامہ جاری کردیا۔

 راولپنڈی (مانٹیرنگ ڈیسک) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 7 دہشتگردوں کی سزائے موت کی توثیق کر دی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق یہ دہشتگرد معصوم شہریوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں پر حملوں میں ملوث تھے۔ یہ دہشتگرد پاک فوج پر حملوں میں ملوث تھے۔ یہ دہشتگرد متعدد افراد کے قتل اور 109 افراد کو زخمی کرنے میں ملوث رہے ان دہشتگردوں کے قبضے سے بارودی مواد اور اسلحہ بھی برآمد ہوا۔ ان دہشتگردوں کا فوجی عدالتوں میں ٹرائل کیا گیا۔ باقی سزا یافتہ افراد کو دیگر سزائیں دی گئیں۔ جن دہشت گردوں کی سزائے موت کی توثیق کی گئی ان میں اطلس خان، محمد یوسف خان، فرحان، کالے خان، نذر مون، نیک مائل خان، اکبر علی شامل ہیں۔ آپریشن ردالفساد کے آغاز سے لے کر اب تک 43 دہشتگردوں کو پھانسی دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق فوجی عدالتوں کا قیام 7 جنوری 2015ء کو عمل میں آیا، فوجی عدالتوں کی توسیع کی مدت میں تاخیر ہوئی۔ آرمی چیف نے فوجی عدالتوں کی توسیع کا معاملہ مارچ 2017ء میں اٹھایا۔ فوجی عدالتوں کی توسیع کی مدت 2019ءمیں ختم ہو گی۔ فوری انصاف کیلئے تاحال کچھ نہیں کیا گیا، فوری انصاف کی فراہمی کیلئے عدالتی نظام میں اصلاحات کی ضرورت ہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc