خطیب مرکزی امامیہ جامع مسجد سکردو شیخ محمد حسن جعفری کا پہلی با دھواں دار خطبہ ، غصے میں وہ کچھ کہہ دیا جسے سُن کی حکمرانوں کی ٹانگیں لرز جائے۔ بلتستان انتظامیہ پر کھل کر تنقید۔

سکردو( پ ر) مرکزی امامیہ جامع مسجد سکردو کے خطیب شیخ محمد حسن جعفری کا جمعے کے خطبے میں فٹبال میچ کے دوران پیش آنیوالے بدترین واقعے کی شدید ترین الفاظ میں مذمت ،اس فعل میں ملوث افراد کی گھناونی حرکت کو جہالت اور علاقے کی روشن تہذیب و ثقافت اور تشخص کو مسخ کرنے کے مترادف قرار دیا اور بلتستان انتظامیہ کو شدید الفاظ میں خبردارکرتے ہوئے مسقتبل میں کسی بھی ٹورنامنٹ پر پابندی کا مطالبہ کر دیا۔

بلتستان میں سود ی کاروبار اور اس گھناونی غیر اسلامی فعل میں ملوث عناصر اور سکردو روڈ کی تعمیر کے حوالے سے مسلسل جھوٹ بولنے پروفاقی اورمقامی حکومت کی واشگاف الفاظ میں پرزور مذمت اور گلگت بلتستان میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر بھی انتہائی تشویش کا اظہار کیا۔

سود کے کاروبار میں ملوث افراد کو بے نقاب کرنے کا حکم، سیلاب ذدگان کے حوالے سے حکومتی لاپرواہیوں کو بھی آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ مقامی حکومت کوعوام کے دکھ درد اور پریشانیوں سے کوئی سروکار نہیں۔ سیلاب کے بعد کی صورت حال پر وزیراعلیٰ وزراء،مشیروں اور دیگر حکومتی نمائندوں کو ان معاملات میں لاپروایوں کا ذمہ دار قرار دیا۔ انہوں نے پرزور الفاظ میں اس بات کو واضح کیا کہ اس وقت حکومتی اور بیوروکریسی کے بہت سارے ذ مہ داران بشمول چیف سکریٹری سرفہ رنگا ریلی کے سلسلے میں بلتستان میں موجود ہیں،لیکن مجال ہے کہ یہ لوگ سیر سپاٹے کو چھوڑ کر دکھی عوام کی بھی خبر گیری کرے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc