وفاقی ٹیکسز اور اڈاپٹیشن کے خلاف عوامی ایکشن کمیٹی ڈٹ گئے، اہم اعلان۔

اسلام آباد(پ،ر)گلگت بلتستان میں کسی بھی قسم کا وفاقی ٹیکس یا اڈاپٹیشن قابل قبول نہیں ہوگا اڈاپٹیشن ایکٹ 2012 کی معطلی پر مکمل طور پر عملدرآمد کو یقینی بناتے ہوئے آئندہ کسی بھی قسم کی قانون سازی کیلئے گلگت بلتستان اسمبلی کو اور پارلیمانی کمیٹی کو اعتماد میں لینے کے بعد لوکل بنیادوں پر قانون سازی کی جائے گی۔گلگت بلتستان میں سرکاری ملازمین اور دیگر شعبہ جات سے ٹیکسز کٹوتی کو فوری طور پر روکا جائے۔بعض موبائل کمپنیاں اور بینک نوٹیفکیشن کے باوجود ٹیکس کٹوتی کر کے خلاف ورزی کررہے ہیں کٹوتی کا سلسہ نہ روکا گیا تو ان اداروں کے خلاف تحریک چلائیں گے۔منرل پالیسی 2016 کو فوری طورپر ختم کرتے ہوئے گلگت بلتستان اسمبلی کے سپرد کیا جائے۔گزشتہ تین روزہ مذاکراتی سیشن میں پارلیمانی کمیٹی عوامی ایکشن کمیٹی اور انجمن تاجران کے مابین جن سفارش پر اتفاق ہوا ہے فوری طور پر عملدرآمد کراتے ہوئے منرل پالیسی کو عوام دوست بنائے جانے کے ساتھ بل واسطہ وفاق کو موصول ہونے والے تمام ٹیکسز کو کشمیر طرز فارمولے کے تحت گلگت بلتستان کو منتقل کرانے بابت کردار ادا کرے۔ان خیالات کا اظہار مولانا سلطان رئیس چئیرمین عوامی ایکشن کمیٹی فدا حسین۔ غلام حسین اطہر صدرانجمن تاجران سکرو مسعود الرحمن آغا تقی سبزواری ودیگر نے اسلام آباد باہمی اجلاس میں کیا اجلاس میں مزید کہا گیا کہ معاہدے پر عملدرآمد نہ کرانے کی صورت میں یکم فروری کی کال برقرار رہے گی اور سخت احتجاج کیا جائے گا۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc