گلگت بلتستان کے ارکان اسمبلی بھی وزیر اعلیٰ کے خلاف اٹھ کھڑے ہو گئے

  اسلام آباد(زاہد حلیم)گلگت بلتستان میں حکومت کا تختہ الٹانے کی منصوبہ بندی کی جا چکی ہے، گلگت بلتستان کے ارکان اسمبلی بھی وزیر اعلیٰ کے خلاف اٹھ کھڑے ہو گئے، 20 کے قریب حکومتی اور اپوزیشن ارکان اسمبلی نے وزیراعلیٰ کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کا اتفاق کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق 20ارکان اسمبلی نے وزیراعلیٰ کے خلاف لانے والے تحریک عدم اعتماد کا حمایت کرنے کا اعلان کیا ہے اس میں گورنر گلگت بلتستان کے اہلیہ رانی عتیقہ اور بیٹا سلیم خان بھی شامل ہے ان دونوں نے بھی تحریک عدم اعتماد کی حمایت کی یقین دہانی کروائی ہے تاہم باقی ارکان اسمبلی میں سے اکثریت ن لیگ کی ہے جبکہ اس میں پیپلز پارٹی بھی شامل ہے، یہ بھی کہا گیا ہے حفیظ الرحمن کے خلاف عدم اعتماد تحریک لانے کے بعد نیا وزیراعلیٰ ن لیگ ہی سے ہو گا جس کا تعلق ضلع دیامیر سے ہے اس حوالے سے ان کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے کہ اگر تحریک عدم اعتماد کامیاب ہوا تو ان کو نیا وزیراعلیٰ منتخب کیا جائے گا۔ تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے تمام اقدامات مکمل کر لی گئی ہے لیکن یہ ابھی تک طے نہیں ہوا کہ کب اور کس وقت یہ تحریک پیش کیا جائے گا، واضح رہے وزیراعلیٰ گلگت بلتستان حفیظ الرحمن کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے بارے میں پیپلزپارٹی کے ممبر اسمبلی جاوید حسین کا ویڈیو پیغام بھی منظر عام پر آیا ہوا ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc