حافظ حفیظ الرحمن کا عہدہ بچائیں یا مستقبل کی سیاست۔ چہ میگویاں شروع۔

سکردو (ڈسٹرک رپورٹر ) پاکستان مسلم لیگ نون بلتستان ریجن کے ممبران قانون ساز اسمبلی کو بھی بلوچستان اسمبلی کی ان ہاوس تبدیلی نے متاثر کردیا جو لوگ کل تک خود کو وزیر اعلی کے سامنے بلکل بے بس سمجھتے تھے انہوں نے بھی لابنگ شروع کردی ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعلی کی یکطرفہ پالیسیوں اور فیصلوں سے نالاں بلتستان ریجن سے تعلق رکھنے والے ممبران نے محسوس کرنا شروع کیا ہے کہ وزیر اعلی اور ڈپٹی اسپیکر کی جانب سے مسلسل بلتستان مخالف بیانات اور سرگرمیاں ان کے مستقبل کی سیاست کیلئے مسائل پیدا کرسکتا ہے۔ وہ ممبران جو ایک سال پہلے اسپیکر ناشاد کی جانب سے تحریک عدم اعتماد کے مشورے سے ناراض تھے انہوں نے بھی حفیظ سے ناراضگی کا اظہار کرنا شروع کیا ہے جس کی بنیادی وجہ حالیہ عوامی تحریک میں بلتستان کے عوام پر مسلسل الزامات بتایا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ مرکز میں مشیروں کیلئے بلتستان سے پارٹی درینہ کارکنان کو بلکل ہی نظر انداز کرکے اپنے منظور نظر لوگوں میں عہدوں کی مسلسل تقسیم اور ایک عوامی منتخب نمائندے سے وزارت اطلاعات کا قلمدان چھین کر غیرمعروف غیر منتخب شخص کو ذاتی پسندیدگی کی بنیاد پر نوازنے سے معاملہ مزید گھمبیر صورت اختیار کرگیا ہے جو کسی بھی وقت فارورڈ بلاک کی صورت میں سامنے آسکتا ہے۔ بلتستان سے تعلق رکھنے والے اراکین اسمبلی نجی محفلوں میں اس حوالے سے بلاواسطہ ایک دوسرے کو یقین دلانے کی کوششوں میں لگے ہیں تاکہ اگلے الیکشن میں عوام کو کم از کم یہ کہہ سکے کہ حفیظ الرحمن مسلکی اور علاقائی سیاست کو پروان چڑھایا تو ہم نے ان سے بیزاری کا اظہار کیا۔ دوسری طرف حفیظ نے اپنے دست راست جس میں مشیر اطلاعات شامل ہیں انہیں اس مسلے نکلنے کیلئے خصوصی ٹاسک دیا ہے جبکہ اسلام میں موجود ایک مشیر کو سوشل میڈیا پر اس حوالے بھرپور حمایتی مہم چلانے کی ذمہ داری سونپ دی گئی ہے اسی طرح کشروٹ کے صحافیوں کو وزیر اعلی کی طرف سے خصوصی ٹاسک دیا ہے کہ وہ اخبارات اور آن لائن نیوز سائٹس پر وزیر اعلی کی امیج کو بہتر سے بہتر انداز میں پیش کریں۔ ادھر پاکستان پیپلزپارٹی نے ان تمام صورت حال کا جائزہ لینے کے بعد جارحانہ سیاست شروع کیا ہے اور پورا فوکس حفیظ الرحمن کے بے نقاب کرنے میں لگایا ہوا ہے۔ مقتدر حلقوں کا کہنا ہے کہ جنوری کا آخری دو ہفتہ اور فروری کا پہلا دو ہفتہ وزیر اعلی کی کرسی کیلئے اہم ہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc