وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے خاندان کے کسی فرد کے پاس ایک بھی ٹھیکہ نہیں ہے۔

گلگت (پ۔ر) صوبائی مشیر اطلاعات گلگت بلتستان شمس میر کی جانب سے میڈیا کو جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن کے خاندان کے کسی فرد کے پاس ایک بھی ٹھیکہ نہیں ہے۔ پیپلز پارٹی والوں کی سیاست دفن ہورہی ہے اسی لئے حواس باختہ ہوکر الزامات لگا رہے ہیں کہ ٹھیکے وزیراعلیٰ کے خاندان کے پاس ہیں۔پیپلز پارٹی والے نائب تحصیلداروں اور پولیس کی بھرتیوں میں بے ضابطگیوں کا الزام لگاتے ہوئے عدالتوں میں گئے تھے جہاں سے ان کے الزامات کو رد کیا گیا اور تمام بھرتیوں کو میرٹ کے مطابق قرار دیا گیا۔اگر پیپلز پارٹی والوں کے پاس کرپشن اور بےضابطگیوں کے کوئی ثبوت موجود ہیں تو نیب اور عدالت میں جاکر ثبوت پیش کریں۔ عوام کو گمراہ کرنے کےلئے کرپشن کا شور مچارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انہیں پتہ ہے کہ پیپلز پارٹی اب کبھی بھی اقتدار میں نہیں آنے والی ہے اسی لئے پیپلز پارٹی والے حواس باختہ ہوگئے ہیں۔ مسلم لیگ (ن) نے ہمیشہ اقدار کی سیاست کی ہے اسی لئے گلگت بلتستان میں عوام کی جانب سے دیئے ہوئے مینڈیٹ کو آزمائش کے طور پر لیا ہے جبکہ پیپلز پارٹی والوں نے سابقہ پانچ سالوں میں اقتدار کو اپنی عیاشی کےلئے استعمال کیا۔ پانچ سال اپنے دور حکومت میں کرپشن، اقرباءپروری اورعیاشی کے علاوہ پورے صوبے میں ایک کلوٹ تک نہیں بنایا۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے ممبر اسمبلی جاوید حسین کا سوست نیشنل بینک کرپشن کے 7 کروڑ کا کیس نیب میں ہے۔ 8 کروڑ کا نیشنل بینک کا نادہندہ ہے مرحوم محمد علی شیخ کے نام پر بھی بنک سے پیسے لیکر کھائے ہیں ان کی گرفتاری کے احکامات نکل چکے ہیں۔ موصوف صرف اس لئے شور مچارہاہے اسے لوٹا ہوا مال واپس کرنا پڑے گا لیکن ریاست اور عوام کا لوٹا ہوا مال اس سے ہر صورت واپس لیا جائے گا۔انہوں نے کہاکہ سابق ڈپٹی سپیکر جمیل احمد پر 17 کروڑ اسمبلی بلڈنگ کے نام پر عوام کے پیسے لوٹنے کا الزام ثابت ہوچکا ہے جس سے 17 کروڑ کے بقایہ جات کی وصولی کی جارہی ہے ذوالفقار آباد پل میں کئے جانے والے بے ضابطگیوں کی انکوائری جاری ہے اسی لئے موصوف کی چیخیں نکل رہی ہے۔ ہماری جماعت انتقامی کارروائیوں پر یقین نہیں رکھتی لیکن عوام اور ریاست کا لوٹا ہوا مال ہرصورت واپس لیا جائے گا۔ صوبے میں اینٹی کرپشن کا ادارہ قائم کیا گیا ہے احتساب کے عمل کو مزید تیز کیاجائے گا اورقومی خزانے کو لوٹنے والوں کا احتساب کیا جائے گا۔ آج بھی 70فیصد ٹھیکے پاکستان پیپلز پارٹی کے ٹھیکیداروں کے پاس ہیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc