محکمہ تعلیم ضلع گانچھے کی بے توجہی سے ہائی سکول مچلو کے طلباء وطالبات تعلیمی مسائل سے دوچار ہو گئے

اسلام آباد (زاہد حلیم)محکمہ تعلیم ضلع گانچھے کی عدم دلچسپی اور بے توجہی سے ہائی سکول مچلو کے طلباء وطالبات تعلیمی مسائل س دوچار ہوگئے۔سردیوں کے ماہ میں بورڈ امتحانات کے ٹیویشن کا بندوبست نہ ہونے سے والدین پریشان جبکہ طلباء وطالبات اپنے گھرسے دورافتادہ مقامات پرجانے پر مجبور ہو گئے ۔ بچوں کے والدین کا کہنا تھا کہ 2008سے2016تک ہیڈماسٹر زکی زیر نگرانی میں بہترین طریقے سے ٹیویشن کا بندوبست ہوتا رہا ہے لیکن اس سال موجودہ ہیڈماسٹر نے بغیر کسی وجہ کے اس ٹیویشن سنٹر کو ختم کر دیا جس سے بچوں کو تعلیم کی حصول اور امتحانات کی تیاری کیلئے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اوران کا تعلیمی سال متاثر ہونے کا خطرہ ہے۔ انہوں نے ان تمام مسائل کا ذمہ دار ہیڈ ماسٹر ہائی سکول مچلو کو ٹہراتے ہوئے کہا کہ ٹیویشن سنٹر کے بارے میں ڈائریکٹر محکمہ تعلیم بلتستان اور ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن ضلع گانچھے کے واضح احکامات ہونے کے باوجود بھی انہوں نے بچوں کو ٹیویشن کی سہولت سے محروم کردیا جس کا ہمیں شدید تحفظات ہے ،تعلیمی کمیٹی نے اس مسئلے کے متعلق ڈی ڈی او سلکولر کوبھی آگاہ کیا تھا لیکن اب تک کوئی واضح پیش رفت نہیں ہوا جو یقیناًہمارے بچوں ساتھ ظلم اور زیادتی ہے ۔ انہوں نے ڈائریکٹر ایجوکیشن بلتستان اور ڈپٹی ڈائریکٹر ایجوکیشن ضلع گانچھے سے اس مسئلے کو جلد حل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ سکول کے ہیڈ ماسٹر کے خلاف محکمانہ کاروائی کریں اور محکمہ تعلیم ضلع گانچھے ٹیویشن سینٹر کو دوبارہ جلد بحال کروانے کیلئے احکامات جاری کرے تا کہ طلباء و طالبات کا تعلیمی استحصال بند ہو سکے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc