گلگت بلتستان میں عوامی تحریک کو راء سے فنانشل سپورٹ حاصل ہے۔ نون لیگ کے اہم رہنما کا انکشاف

اسلام آباد(بیورورپورٹ) گلگت بلتستان میں ٹیکس مخالف عوامی تحریک کو ثبوتاز کرنے کیلئے مسلم لیگ نون کی حکومت نے ہر قسم کے الزامات لگائے وزیر اعلیٰ کیجانب سے مسلکی احتجاج اور راء سے تعلقات کا شبہہ ظاہر کرنے کے بعد گزشتہ ہفتے برطانیہ میں مقیم مسلم لیگ نون کے اہم رہنما ڈاکٹر شیر بہادر انجم جنکا تعلق استور سے ہے جو بلتستان کے داماد ہیں اور اُنہیں سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کا بہت قریبی کارکن سمجھا جاتا ہے۔ اُنہوں نے جموں کشمیر ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ بات تو طے ہے کہ ٹیکس معطل ہوا ہے کلعدم نہیں لیکن عوام کو ٹیکس کسی بھی صورت دینا پڑے گا۔ گلگت بلتستان میں ٹیکس کے خلاف جاری عوامی تحریک کے حوالے سے اُن کا کہنا تھا یہ بات کنفرم ہے کہ گلگت بلتستان میں جاری عوامی تحریک کو راء کی جانب سے مالی سپورٹ حاصل تھی اور اسلام آباد سے اس سلسلے میں ایک خطیر رقم گلگت ٹرانسفر ہوئی ہے اس سلسلے میں ادارے تحقیق کررہے ہیں ۔ اُنہوں نے سوال کیا کہ لاکھوں لوگوں کیلئے کئی دنوں تک کھانے پینے کی اشیاء کا انتظام کس نے کیا یقیناً , راء کی جانب سے فنڈنگ کے بغیر ایسا ممکن نہیں ایک طرف عوام کو سڑکوں پر تھے دوسری طرف بھارتی میڈیا مسلسل اُن احتجاج کو کوریج دے رہا تھا جبکہ پاکستانی میڈیا میں اس حوالے سے کوئی خبر نہیں چلی، اسکا مطلب یہ ہے کہ عوامی تحریک کے نام پر گلگت بلتستان میں کچھ عناصر سی پیک کو ناکام بنانے کیلئے پاکستان دشمن عناصر کے ساتھ ملے ہوئے ہیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc