ٹیکس کا نفاذ 2012میں پیپلز پارٹی کی حکومت نے کیا اس لئے پیپلز پارٹی ہی دفن ہوجائے تو بہتر ہے۔

شگر(پ ر)انجمن تاجران چھورکاہ شگر کے صدر حاجی فدا حسین نے کہا ہے کہ ٹیکس کا نفاذ 2012میں پیپلز پارٹی کی حکومت نے کیا اس لئے پیپلز پارٹی ہی دفن ہوجائے تو بہتر ہے۔گلگت بلتستان کی عوام پیپلز پارٹی کی جانب سے نافذ کردہ ٹیکس کی وجہ سے روڈ پر نکلنے پر مجبور ہوئے۔پیپلز پارٹی شگر کے سیکریٹری جنرل عوامی ایکشن کمیٹی اور انجمن تاجراں کی جدوجہد پر سیاست نہ کریں۔حالیہ ٹیکس کے خلاف ریلی اور احتجاج میں بھی شگر کی پیپلز پارٹی کی کارکردگی انتہائی مایوس کن رہا اور پیپلز پارٹی ڈوغلی پالیسی کیساتھ لوگوں کو دھوکہ دیتے رہے۔ ممبر اسمبلی نے شگر میں موجود ہونے کے باؤجود کھیل کو ترجیح دیکر آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت نہ کرکے عوامی مینڈیٹ کی توہین کی اور اپنی اصلیت بتادی۔اور نہ ہی کسی پارٹی عہدیدار نے شرکت کی ۔جس سے پیپلز پارٹی کی شگر مین دلچسپی ظاہر ہوتی ہے۔ ممبر اسمبلی کی دلچسپی شگر کی عوام سے زیادہ سکردو اور دیگر جگوں پر ہے۔ وہ شگر میں عوامی اجتماعات اور اجلاسوں مین شرکت کو اپنی توہین سمجھتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے ممبر اسمبلی اور رہنماؤں کو اخبارات میں بیانات دینے سے بہتر ہے کہ وہ شگر کی ترقیاتی کاموں پر توجہ دیں۔ممبر اسمبلی کی نااہلی کی وجہ سے ضلع شگر دیگر اضلاع کے مقابلے میں ترقیاتی کام میں سب سے پیچھے ہیں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc