یوم آزادی پاکستان کے سلسلے میں ضلعی ہیڈ کوارٹر چلاس میں منعقدہ تقریب شدید بد نظمی کا شکار ہوگئی،انتظامیہ نے جشن آزادی کی تقریب ہائی سکول چلاس کے گرونڈ میں رکھنے کے بجائے سکول کے ہال میں منعقد کرایا ، جشن آزادی کی تقریب میں عوام کی بڑی تعداد کو ہال کے اندر آنے نہیں دیا گیا جس کی وجہ سے عوام تقریب میں شریک نہ ہوسکے ۔اور ہال کے اندر لوگوں کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے بگھدڑ مچ گئی۔

چلاس(نامہ نگار) جشن آزادی پاکستان کے سلسلے میں ضلعی ہیڈ کوارٹر چلاس میں منعقدہ تقریب شدید بد نظمی کا شکار ہوگئی،انتظامیہ نے جشن آزادی کی تقریب ہائی سکول چلاس کے گرونڈ میں رکھنے کے بجائے سکول کے ہال میں منعقد کرایا ، جشن آزادی کی تقریب میں عوام کی بڑی تعداد کو ہال کے اندر آنے نہیں دیا گیا جس کی وجہ سے عوام تقریب میں شریک نہ ہوسکے ۔اور ہال کے اندر لوگوں کی تعداد زیادہ ہونے کی وجہ سے بگھدڑ مچ گئی اور سامعین شدید بد نظمی کے حالت میں پروگرام کے دوران پسینے سے شرابور ہوتے رہے ،لیکن انتظامی زمہ داروں کے کانوں میں جوں تک نہ رینگی۔۔۔ جشن آزادی کی تقریب میں مناسب انتظامات نہ کیئے جانے پر شہری برہم ہوئے اور انتظامیہ پر برس پڑے ۔مقامی شہریوں نے جشن آزادی کی ریلی کے بعد ڈی سی دیامر کو جشن آزادی کی تقریبات کے انتظامات سے متعلق شکایات کیئے تو ڈی سی دیامر دلدار ملک نے کہا کہ اگر انتظامات میں مزید رنگ بھر دیا گیا تو فتوے لگیں گے ،جس پر شہری خاموش رہے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc