نوکریاں تقسیم ،سرکاری اداروں میں کام کرنے والے عارضی ملازمین آپے سے باہر۔

گلگت ( ڈسٹرک رپورٹر) گلگت بلتستان کے سرکاری اداروں میں کئی سالوں سے ریگولر کے ہونے کی امید سے بیٹھے عارضی ملازمین نے آج اتحاد چوک پر حکومت کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرہین کا کہنا تھا کہ اس وقت 26محکموں کے چار ہزار سے زائد عارضی ملازمین ریگولر ہونے کے منتظر ہیں لیکن حکومت کی طرف سے ان افراد کو کچھ اضافی نمبروں کے ساتھ اشتہارات کے ذریعے ٹیسٹ میں شامل ہونے کو کہاجارہا ہے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ اب تک حکومت کی جانب سے مختلف سرکاری محکموں میں کام کرنے والے کئی ہزار افراد کو ریگورلر کرچُکے ہیں لیکن جب اُنکی باری آئی تو کچھ اضافی نمبر دینے کا بہانا بنا کر ٹیسٹ میں بٹھانے کی کوشش کی جارہی ہے جو کہ ہمارے اوپر ظلم ہے اگر یہ تمام لوگ جو گزشتہ کم از کم بیس سالوں نوکری کے اہل نہیں تھے تو اتنے عرصے عارضی ملازمت کیوں رکھا۔ مظاہرین کا کہنا تھا ہمیں گلگت بلتستان کے تمام اضلاع میں کام کرنے والے عارضی ملازمین کی نمائندگی حاصل ہے لہذا گلگت میں مسلہ حل نہیں ہوا تو احتجاج کا دائرہ دیگر اضلاع تک بھی بڑھایا جائے گا۔
دوسری طرف جب ہم نے اس سلسلے میں حکومت اور اپوزیشن پارٹیوں کے کچھ رہنماوں سے معلومات حاصل کرنے کی کوشش کی تو کہا یہ جارہا ہے کہ کچھ حکومتی مشیر اور وزیر ان افراد کی جگہ اپنے عزیز اقارب کو کھپانے کیلئے برائے نام اخبارات میں اشتہارات دینا چاہتے ہیں کیونکہ یہ تمام ملازمتیں پہلے کی حکومتی وزیروں اور مشیروں میں تقسیم ہوچُکی ہے۔ لہذا عارضی ملازمین کے ساتھ یہ ذیادتی حکومت کی جانب سے اقرباء پروری کی ایک انتہاء ہے

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc