اپوزیشن لیڈر قانون ساز اسمبلی ڈٹ گئے۔ حکومت کو عدم اعتماد کی دھمکی۔

اسلام آباد ( پریس ریلیز) گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر کپٹن ریٹائرڈ محمد شفیع خان نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے وفاق کے ساتھ اتفاق رائے سے منظور شدہ سفارشات سے ایک انچ بھی پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ پارلیمانی کمیٹی اور عوامی ایکشن کمیٹی کے درمیان تین نکاتی چارٹرڈ پر اتفاق ہوا تھا لیکن حکومت صرف ٹیکس ایڈاپٹشن ایکٹ2012 کی منسوخی پر ٹرخانا چاہتی ہے۔ اُنہوں نے کہا متوقع نوٹفکیشن میں ٹیکس کے علاوہ کا ذکر نہ لایا تو عدم اعتماد لایا جاسکتا ہے۔ تفٰصیلات کے مطابق اُن کے آفس سے جاری پریس ریلیز میں موقف اختیار کیا ہے کہ گلگت بلتستان کے نمائندے وفد،پارلیمانی کمیٹی اور مقامی حکومت کے درمیان بارہا مذاکرات کے باوجود حال مسلے کو کوئی مستقل حل نہیں نکالا گیا جس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ حکومت مذاکرات میں سنجیدہ نہیں۔ ہمارا ڈو ٹوک موقف ٹیکس ایڈاپٹشن کی مکمل خاتمے کے ساتھ منرل پالیسی 2016کا خاتمہ اوربلاواسطہ ٹیکس کی تقسیم پر سفارش پر مشتمل نوٹفکیشن کے اجراء کو یقینی بنایا جائے۔بصورت دیگر پارلیمانی کمیٹی اور صوبائی حکومت پر عدم اعتماد کرتے ہوئے ہم عوام میں جانے پر مجبور ہونگے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc