سب ڈویژن گلگت میں مضر صحت مشروبات پر پابندی ،دیگر اضلاع کے انتظامیہ ابھی تک نیند میں، بلتستان بھر میں جعلی مشروبات اور غذائی موادکی بھرمار اور جعلی اشیاء اصل کی قیمت پر فروخت کیا جارہا ہے ۔ متعلقہ ادارے خاموش تماشائی بنا ہوا ہے۔

سکردو ( نامہ نگار) سب ڈویژن گلگت کے مجسٹریٹ نوید احمد کی جانب سے جاری ہونے والے ایک اعلامئے کے مطابق سب ڈویژن گلگت کے حدود میں موجود تعلیمی اداروں میں انرجی و کولڈ ڈرنکس کی خیر ید، فروخت و استعمال پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق پنجاب ایجوکیشن انسٹیٹیوشن فوڈ سٹینڈرڈ ریگولیشن کے تحت کئے جانے والے فیصلے کے مطابق ملک کے دیگر حصوں کی طرح سب ڈویژن گلگت کی حدود میں بھی موجو د تعلیمی اداروں میں انرجی و کولڈ ڈرنکس کی خرید و فروخت اور استعمال پرمکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے جسکا اطلاق چودہ اگست سے غیر معینہ مدت تک کیلئے ہو گا۔ لیکن دیگر اضلاع میں اس حوالے سے کوئی کام نہیں ہورہا۔ بلتستان ڈویژن میں جعلی مشروبات اور غذائی مواد کی بھر مار ، ہول سیلرز اور دوکاندار غیر معیاری اشیاء بلا خوف خطر فروخت کر رہا ہے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں۔ سکردو بازار میں فوڈ انسپکٹرز اشیاء کی معیار کو چیک کرکے جرمانہ لگانے کے بجائے دوکانداروں کے ساتھ خوش گپیوں میں مصروف دعوتیں لٹاتے نظر آتا ہے۔ کمشنر بلتستان کو چاہئے کہ اس حوالے سے فوری ایکشن لیں اور گلگت کی طرح بلتستان چاروں اضلاع میں بھی عوامی مفاد اور حفظان صحت کے اصولوں کو مدنظر رکھتے ہوئے نجی ، سرکاری تعلیمی اداروں،کوچنگ سنٹروں میں گیس والے اور غیر معیاری گمنام کمپینوں کے مشروبات اور عوامی سطح پرغیر معیاری اور جعلی کمپنیوں کے نام پر بکنے والے تیل، چائے ،گھی صابن ،شیپو ، بسکٹ ، دودھ پاوڈراور دیگر اشیاء کی فروخت پرمکمل پرپابندی اور جرمانہ عائد کر یں۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc