محکمہ تعلیم میں کرپٹ مافیا پھر سے سر گرم ہونے کا انکشاف ۔

سکردو(بیورو رپورٹ) محکمہ تعلیم میں مافیا پھر سے سر گرم ہونے کا انکشاف ۔ زرائع کے مطابق گلگت بلتستان حکومت نے مفت اور معیاری تعلیم فراہم کرنے کے سلسلہ میں کئی اقدامات کئے ہیں پچھلے سال مفت کتابیں مہیا کی گئی اور سیکرٹری تعلیم نے تدریسی معیار کو جانچنے کے لیے مختلف زون بنایا جس میں رزلٹ خراب لانے والے اساتذہ کی ترقی روکنے اور انکریمنٹ بند کرنے کی سزائیں شامل ہیں ان سزاوں سے بچنے کیلئے ڈی ڈی اوز/ہیڈ ماسٹروں نے بہت سے بچوں کا امتحانی فارم بحثیت پرائیویٹ امیدوار کے طور پر کردیا گیا ہے جبکہ باقی بچوں سے ونٹر کیمپ کے نام پر مختلف شرح مبلغ اٹھ سو سے ایک ہزار روپے کے درمیان فیس وصول کیا جارہا ہے ستم ظریفی یہ ہے کہ دوردراز کے علاقوں سے بچوں کو سکردو سنٹر کھول کر جبری طور پر یہاں لایا گیا ہے اور ونٹر کیمپ میں شامل نہ ہونے والے بچوں سے بھی زبردستی فیس وصول کر نے کے بھی اطلاعات ہیں جوکہ اس مہنگائی کے طوفان میں غریب والدین کے اوپر زیادتی ہے ساتھ ہی جی بی حکومت کی تعلیمی پالیسیوں کے بلکل برعکس ہے والدین کا مزید کہنا ہے کہ ارباب اختیار سے ہماری اپیل ہے کہ اس سلسلہ میں فوری تحقیقات کرکے ذمہ داروں کے خلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائے ۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc