علماے امامیہ شگرنے مسلک نوربخشیہ شگر کے مدرسے میں آتشزدگی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

شگر(نامہ نگار)علماے امامیہ شگر کا مسلک نوربخشیہ شگر کے مدرسے میں آتشزدگی پر تشویش ۔جبکہ معاملے کی تحقیقات کے لئے فوری طور پر کمیٹی قائم کرنے پر شگر انتظامیہ کے کردار کو سراہتے ہوئے شفاف تحقیقات کی امید ظاہر کی تفصیلات کے مطابق علماء امامیہ شگر کا ایک اجلاس زیر صدارت صدر علماء امامیہ سید طہ شمس الدین چھورکاہ میں ہوا جس میں نوربخشیہ برادری کے مدرسے میں اچانک لگنے والی آگ پر افسوس کا اظہار کیا گیا اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے علمائے امامیہ شگر کے سربراہ نے کہا کہ مدرسے میں لگنے والا آگ کسی سازش کا حصہ ہوسکتا ہے کیونکہ امن دشمن عناصر شگر میں موجود اتحاد امت کی فضا سے پریشان ہیں انھوں نے کہا کہ نوربخشیہ برادری کی جانب سے کی جانے والی تشویش بھی بجا ہے اور امن امان برقرار رکھنے کے لئے انتظامیہ کے ساتھ مل کر جو اقدام اٹھایا وہ بھی قابل تحسین ہے انہوں نے کہا کہ اس موقع پر ڈی سی شگر ذاکر حسین اور ایس پی سید الیاس کا کردار بھی قابل تعریف ہے کیونکہ دونوں زمہ داروں کی بروقت مداخلت نے شگر کو فرقہ واریت کی ہوا لگنے سے بچا لیا اس موقع پر مدرسے میں لگنے والی آگ کی وجوہات جاننے کے تشکیل دی گئی تحقیقاتی کمیٹی پر مکمل اعتماد کا اظہارِ کرتے ہوہے کہا کہ کمیٹی بہت جلد ان مہروں کو بے نقاب کریں گے تاکہ آئندہ کسی کو اس طرح کے حرکات کی جرات نہ ہو

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc