غیر آئینی ٹیکسوں کے معاملے پر صوبائی حکومت کی ہٹ دھرمی سے نواز لیگ کے عزائم کھل کر سامنے آگئے ہیں۔ سیکرٹیری جنرل پیپلزپارٹی سکردو

سکردو(پ۔ر) پیپلز پارٹی سب ڈویژن سکردو کے جنرل سکریٹری طالب حسین نے کہا ہے کہ غیر آئینی ٹیکسوں کے معاملے پر صوبائی حکومت کی ہٹ دھرمی سے نواز لیگ کے عزائم کھل کر سامنے آگئے ہیں۔ایسا لگتا ہے کہ گلگت بلتستان میں کوئی جمہوری حکومت نہیں بلکہ مارشل لاء نافذ ہے۔شدید ترین عوامی احتجاج کے باوجود حکومتی بے حسی بہت بڑا سوالیہ نشان ہے۔گلگت بلتستان کی تاریخ میں ایسی ناکام اور بے حس حکومت کبھی نہیں آئی۔صوبائی حکومت عوام کی شرافت کو بزدلی اور صبر کو بے غیرتی نہ سمجھے۔اگر تمام اضلاع کے لانگ مارچ گلگت پہنچنے سے قبل ٹیکسوں کا مسئلہ حل نہ ہوا تو صوبائی حکومت ہٹاو گلگت بلتستان بچاؤ تحریک کا آغاز ہوسکتا ہے اور اسکے بعد وزیر اعلی اور وزراء عوامی سیلاب کی تاب نہ لاسکیں گے اور انہیں سر چھپانے کی جگہ نہیں ملے گی۔گلگت بلتستان کے عوام صوبائی حکومت سے پوچھ رہے ہیں کہ کیا حکومت صرف تنخواہیں، مراعات،پروٹوکول اور ٹھیکے لینے کا نام ہے۔کیا عوام نے وزیر اعلی اور وزراء کو ذاتی مفادات کے تحفظ کے لئے اسمبلی میں بھیجا تھا۔موجودہ حکومت دراصل گلگت بلتستان کی بدقسمتی اور عوام پر بوجھ کے سوا کچھ نہیں۔سکردو کے احتجاجی مظاہرے میں نواز لیگ کے سینکڑوں ووٹرز نے موجودہ حکومت کو ووٹ دینے پر قوم سے معافی مانگی ہے جو کہ موجودہ حکومت کے منہ پر عبرت کا طمانچہ ہے۔پیپلز پارٹی بلتستان کا 85 گاڑیوں پر مشتمل قافلہ کل کے لانگ مارچ میں گلگت جانے کے لئے تیار ہے۔پیپلز پارٹی عوامی مفادات کے تحفظ کے لئے صف اول میں کھڑی ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc