گلگت بلتستان کو ٹیکس فری زون قرار دیا جائے حالیہ شٹر ڈاؤن ہڑتال کی وجہ سے گلگت بلتستان میں ہزاروں مریض مسافروں شہریوں اور تاجروں کا معاشی قتل عام ہورہا ہے۔ موسی خان

سکردو(پ ر) عوامی بیداری تحریک گلگت بلتستان و سابق امیدوار گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی محمد شریف خان نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہمارا اصولی موقف رہا ہے گلگت بلتستان کو ٹیکس فری زون قرار دیا جائے حالیہ شٹر ڈاؤن ہڑتال کی وجہ سے گلگت بلتستان میں ہزاروں مریض مسافروں شہریوں اور تاجروں کا معاشی قتل عام ہورہا اور بہت سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ہمارے اپنے علاقے کے عوام کو پرشان کرنا غیر اخلاقی ہے اور احتجاج کرنے والے ایک طرف پانچواں صوبہ بنانے کا نعرہ لگا رہے ہیں تو دوسری طرف ٹیکس سے انکاری گندم اور ٹیکس کے نام پر احتجاج کرنے والے کھبی علاقے کے بنیادی علاقائی اور سیاسی حقوق حاصل نہیں کرسکتے گلگت بلتستان سپریم کورٹ اف پاکستان اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق تسلیم شدہ متنازعہ خطہ ہے گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے سے کشمیر کاسٹ کو نقصان پہنچ سکتا ہے اور صوبہ بنانا کسی صورت ممکن نہیں ہے صوبے کا نعرہ کا نعرہ لگا کر عوام کو پچھلے ستر سالوں سے گمراہ کیا جارہا ہے اور گلگت بلتستان کو ازار کشمیر یا مقبوضہ کشمیر طرز کا سیٹ اپ دیا جائے تاکہ کشمیر ایشو کو بھی نقصان نہ پہنچ سکے انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے حقوق کے حصول کیلئے سب سے بڑی رکاوٹ وفاقی سیاسی جماعتوں اور مذہبی پارٹیاں ہے 2012 سے اب تک وفاقی پارٹیوں کے گلگت بلتستان کونسل کے ممبران کی تجویز اور حمایت پر ٹیکس نافذ کردیا ہے آج وہی وفاقی جماعتوں کے درباری ٹیکس مخالف احتجاج کے نام پر اپنے ذاتی مقاصد حاصل کرنے اور علاقے کے غریب عوام کو استعمال کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ جو لوگ قوم پرستوں کو متنازعہ خطہ کہنے پر غدار قرار دیتے تھے اج قوم پرستوں کا موقف بیان کرکے اپنے ناپاک عزائم کو حاصل کرنا چاہتے ہیں اور وہی لوگ ایک طرف محب وطن پاکستانی ہونے کا دعویٰ کررہے ہیں تو دوسری طرف ٹیکس کے خلاف عوام کو اکسا کر اپنے مقاصد حاصل کررہے ہیں انہوں نے کہا گلگت بلتستان میں جاری شٹر ڈاؤن ہڑتال سے مسائل کا حل نہیں ہوسکتا ہے لہٰذا عوامی بیداری تحریک جلد عالمی عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc