گلگت بلتستان میں غیرقانونی ٹیکس کی نفاذ کے خلاف قراقرام نیشنل موومنٹ اور گلگت بلتستان اسٹوڈنٹس کا کراچی پریس کلب پر مظاہرہ۔ بین الاقوامی قوانین کے مطابق حقوق کا مطالبہ۔

کراچی(ذیڈ اے کھرمنگی) کراچی پریس کلب پر گلگت بلتستان کے طلباء اور قراقرام نیشنل موومنٹ کا الگ الگ مظاہرہ ہوا جس میں گلگت بلتستان میں عائد کیے جانے والے غیر قانونی ٹیکس کو لے کر مظایرین میں شدید غم وغصہ پایا گیا.مظاہرین نے غیر قانونی ٹیکس اور حکومت کے خلاف نعرہ بازی کی .مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مختلف تنظیموں کے رہنماوُں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے عائد کیے جانے والے ٹیکس صرف اور صرف غنڈہ ٹیکس ہے جو ایوان میں بیٹھے ہوئے جاہلوں کی شاہ خرچی کے لئیے خرچ کیے جائے گے.حکومت متنازعہ علاقے میں ٹیکس نافذ کر کے عالمی قوانین کا مذاق اڑا رہے ہیں.ہم تب تک ٹیکس نہیں دینگے جب تک عالمی قوانین کے تحت ہمیں حقوق نہیں دیتا.کے این ایم کے رہنماوُں نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان میں جب وفاق چاہے قوانین بنا دیتی ہے جو علاقے کے موافق نہیں ہوتی اور جب ان کے خلاف احتجاج کیا جاتا ہے تو غدار کہہ کر زندانوں میں ڈال دیا جاتا ہے۔ مظاہرین سے قراقرام نیشنل موومنٹ , عوامی جمہوری انقلاب,پیپلز پارٹی ,بی این ایس او,کھرمنگ اسٹوڈنٹس فیڈریشن,بی ایس ایف سمیت مختلف طلباء تنظیموں کے رہنماوں نے خطاب کیا۔ مقررین نے مطالبہ کیا کہ حکومت جلد از جلد غیر قانونی ٹیکس کا خاتمہ کریں اور اسیر رہنماوں افتخار حسین.بابا جان,حسنین رمل سمیت دیگر قوم پرست و ترقی پسند سیاسی اسیروں کو رہا کیا جائے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc