گلگت بلتستان تھری جی انٹرنیٹ کی سہولت سے محروم، ایس سی او کا تجرباتی سروس ختم،عوام کو کروڑوں کا نقصان۔ آذاد کشمیر سریل کے 3G/4G سم کا دھندہ عروج پر۔

سکردو(نامہ نگار )گلگت بلتستان کو ٹیلی کام اتھارٹی نے اور حکومت پاکستان نے دور جدید کی اہم سہولیات تھری جی فور جی کی اہم سہولیات سے محروم رکھا ہوا اور ایس سی او نے تجرباتی بنیادوں پر گلگت بلتستان کو تھری جی فور جی کی سہولیات فراہم کیا گیا تھا اور چند دونوں میں ایس سی نے پورے گلگت بلتستان میں فور جی سیم فروخت کرکے کروڑوں روپے کمائے اور راتوں رات بند کر دیا جبکہ آذاد کشمیر میں ایس سی او نے تھری جی اور فور جی کی سروس فری میں چلا رہا ہے اور آذاد کشمیر کا تھری جی فور جی سیریل والے نمبر پر گلگت بلتستان میں بھی تھری جی فور جی سروس چل رہا ہے جس سے فائدہ اٹھا کر ایس سی فرنچائز نے بلیک مارکیٹنگ کے ذریعے کشمیر کے سیریل والے نمبر تین ہزار سے پانچ ہزار میں فروخت کیا جارہا ہے ایس سی او کے حکام بھی اپنے فرنچائز کے ساتھ مل کر بلیک مارکیٹنگ میں ملوث ہے گلگت بلتستان کے عوامی حلقوں میں حکومت پاکستان کے خلاف سخت غم و غصہ پایا جارہا ہے ستر سالوں سے گلگت بلتستان کے عوام کو نظر انداز کیا جارہا ہے گلگت بلتستان کے ساتھ سوتیلی ماوں جیسا سلوک کیا جارہا تھری جی فور جی کی سروس ہی سے دیکھا جاسکتا ہے آذاد کشمیر میں زونگ ٹیلی نار یو فون اور دیگر موبائل کمپنیوں کو تھری جی فور جی کی سروس چلانے کی اجازت دیکر سروس باقاعدہ سے چلا رہا ہے اور گلگت بلتستان بھی آذاد کشمیر کی طرح متنازعہ علاقہ ہونے کے باوجود ایک طرف آذاد کشمیر میں تھری جی فور جی کی سروس چلانے کی اجازت دینا اور دوسری طرف گلگت بلتستان کے عوام کو تھری جی فور جی کی سروس چلانے کی اجازت اب تک نہیں دینا سراسر زیادتی پر مبنی ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc