بلتستان ڈویژن میں نئے ضلع کی تشکیل کیلئے باقاعدہ مہم کا آغاز کردیا۔ اس سلسلے میں عنقریب کانفرنس بُلانے کا فیصلہ۔

سکردو( نامہ نگار خصوصی) ضلع سکردو کے سب سے بڑے آبادی والے سب ڈویژن روندو کو ڈسٹرک بنانے کیلئے مہم تیزکردیا۔ روندو ضلع تحریک کے بانی چیرمین پروفیسر علی شفاء کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ گلگت بلتستان میں روندو سے کم آبادی والے سب ڈویژن ضلع بن سکتا ہے تو روندو کیوں نہیں۔ اُنکا کہنا تھا کہ سب ڈویژن روندو 65000کی آبادی پر مشتمل ہیں اور یہاں صرف چار ہائی اسکول ایک غیر فعال ہسپتال ہے جس کی وجہ سے عوام کو کئی قسم کے سماجی مسائل درپیش ہیں جسکا واحد حل روند ضلع ہے۔ اُن کا مزید کہنا تھا کہ سب ڈویژن روندو میں انتظامی طور پر صرف چار یونین کونسل ہیں جبکہ آبادی کے لحاظ سے کم ازکم دس یونین کونسل ہونا چاہئے تھا لیکن روندو کو اپنے ہی لوگوں کی عدم توجہی کے سبب مرکز میں بھی کوئی پوچھنے والا نہیں۔ اُنکا یہ بھی کہنا ہے کہ اس سلسلے میں ہم نے بہت جلد آل پارٹیز کانفرنس بُلانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں اہم حکومتی شخصیات کو بھی مدعو کرکیا جائے گا تاکہ گلگت بلتستان کے حکمرانوں کے اس علاقے کے عوام کی پریشانیوں کا احساس ہوسکے ۔اُنہوں نے بلتستان ریجن کے سول سوسائٹی اور سوشل ایکٹیوسٹ حضرات سے خصوصی طور پر اس سلسلے میں تعاون کرنے اور روند ضلع تحریک کو کامیاب بنا کر روندو کے مظلوم عوام کے ساتھ دینے کی گزارش کی ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc