صوبائی حکومت ٹیکس کے معاملے میں عوام اور ایکشن کمیٹی کیساتھ وعدے سے انحراف نہ کریں۔رہنماء ایم ڈبلیو ایم

شگر(نامہ نگار)مجلس وحدت المسلمین شگر کے رہنماء محمد ظہیر عباس نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت ٹیکس کے معاملے میں عوام اور ایکشن کمیٹی کیساتھ وعدے سے انحراف نہ کریں۔ اور ٹیکس ایڈاپشن کی معاملے کو فوری طور پر حل کریں ورنہ عوام 21دسمبر سے تاریخی دھرنے اور احتجاج پر مجبور ہونگے جوکہ اس صوبائی حکومت اور جی بی کونسل کی برخاتسگی تک جاری رہیں گے۔ دھرنے کے بعد حکومت سے مزید کوئی مذاکرات نہیں ہونگے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت عوام کو ریلیف دینے میں مکمل ناکام ہوچکا ہے۔ یہ حکومت اپنے وفاقی آقاؤں کی اشارے پر گلگت بلتستان کے عوام کو تنگ کرنے اور ان پر زندگی دشوار کرنے کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ اس حکومت کے پاس خود سے فیصلہ کرنے کی نہ جرات ہے اور نہ ہی اختیار۔ ٹیکس کے معاملے پر یہ عوام کو گمراہ کررہے ہیں۔ انہوں نے صوبائی حکومت پر زور دیا کہ وہ عوام دشمن پالیسی سے باز رہے اور ٹیکس لگانے سے باز رہے۔ عوام کیساتھ کئے گئے وعدے پر عمل پیرا ہوکرفوری طور ٹیکس ایڈاپشن کی معاملے کو حل کریں ۔ ورنہ گلگت بلتستان کے عوام 21دسمبر سے تاریخی دھرنے اور احتجاج کے ذریعے اس بے اختیار اور عوام دشمن حکومت کو ہتاکر دم لیں گے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc