صوبائی حکومت اور کونسل ممبران عوام کے ساتھ کئے گئے وعدے کا پاس رکھتے ہوئے گلگت بلتستان میں عائد کردہ تمام ٹیکسز کے خاتمے کا نوٹیفیکشن جاری کریں ۔ مولانا سلطان رئیس

چلاس(ابوبکر صدیق )عوامی ایکشن کمیٹی گلگت بلتستان کے مرکزی چیرمین مولانا سلطان رئیس ،فدا حسین،محمد ابراہیم و دیگر نے چلاس میں انجمن تاجران دیامر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت اور کونسل ممبران عوام کے ساتھ کئے گئے وعدے کا پاس رکھتے ہوئے گلگت بلتستان میں عائد کردہ تمام ٹیکسز کے خاتمے کا نوٹیفیکشن جاری کریں ورنہ ہمارا اگلا لایحہ عمل گزشتہ احتجاج سے سخت اور خطرناک ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ کونسل ممبران سوچ سمجھ اور سوجھ بوجھ سے عاری ہیں اور انہیں پتہ ہی نہیں کہ وہ قوم کے ساتھ کیا کرنے جارہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے حکمرانوں کے گردنوں میں سریا اٹکی ہوئی ہے ،گزشتہ حکومت کے گردن میں بھی یہی سریا اٹکی ہوئی تھی جس کو عوامی ایکشن کمیٹی نے گندم سبسڈی تحریک میں متحد اور منظم ہوکر توڑا تھا اور اُنہیں جھکانے پر مجبور کیا تھا ،موجودہ حکومت کے گردن میں بھی سریا ہے جو ٹیڑھی ہونے کا نام نہیں لے رہی عوام اس سریا کو بھی منظم اور متحد ہوکر کاٹ دیں گے اور انہیں جھکانے پر مجبور کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت ہوش کے ناخن لیں گلگت بلتستان کی قوم ٹیکسز دینے کی پوزیشن میں نہیں ہے ،اگر گلگت بلتستان کو آئینی حقوق ملتے ہیں بھی تو یہاں کی عوام پر ٹیکسز کی نفاظ کا مخالفت کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان ایک حساس خطہ ہے اس خطے کی حساسیت کو مد نظر رکھتے ہوئے ریاستی مقتدر ادارے یہاں کی عوام پر ظلم ہونے نہیں دیں ۔انہوں نے کہا کہ سی پیک کی وجہ سے بہت سارے دشمن ممالک نے اس اقتصادی راہداری کو ناکام بنانے کیلئے گلگت بلتستان میں فنڈنگ کی ہوئی ہے اور وہ عناصر اپنے مذموم مقاصد کے حصول کیلئے برسر پیکار ہیں ،ایسے میں ان دشمن قوتوں کے ناپاک عزائم کو تقویت بخشنے اور فعال کرنے کیلئے ہمارے حکمران اور کونسل کے ممبران بیٹھے ہیں جو گزشتہ ایک مہینے سے عوام کی احتجاج پر خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اگر ٹیکس ایشو حل کرنے میں کمزوری دیکھائی تو یہ احتجاج طول پکڑے گاجس سے نہ صرف گلگت بلتستان حکومت کو خطراہ لاحق ہوگا بلکہ اقتصادی راہداری کا منصوبہ بھی متاثر ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ 24نومبرکو بین الاضلاعی رابطہ مہم کا آغاز کررہے ہیں جس کے بعد آئندہ کا لایحہ عمل طے کریں گے انہوں نے کہا کہ اُمید ہے صوبائی حکومت اور کونسل مزید احتجاج کی نوبت لانے سے پہلے اس مسلے کو حل کریں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت ہمارے چارٹر آف ڈیمانڈ پر عمل کیا جائے ،ٹیکسز ایشو پر کسی کو سیاست کرنا نہیں دیں گے ،یہ عوامی مسلہ ہے ،عوام مل کر اس مسلے کو حل کرائیں گے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc