آئینی حقوق کے بغیر متنازعہ علاقے میں ہر قسم کے ٹیکسز کی بھرپور مخالفت کرتے ہیں ، گلگت بلتستان مسلہ کشمیر کا اہم فریق ہے یہاں سٹیٹ سبجیکٹ رول بحال کیا جائے اور اس علاقے کو کشمیر طرز کا سیٹ اپ دے کریہاں کی عوام کو قومی دھارے میں شامل کیا جائے ۔ ترجمان ڈیم کمیٹی چلاس

چلاس(بیورورپورٹ)ترجمان ڈیم کمیٹی نجیب اللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ وفاق گلگت بلتستان کو متنازعہ قرار دیکر آئینی حقوق دیتا نہیں ہے جبکہ اُوپر سے متنازعہ علاقے کے غریب عوام پر ٹیکسز نافظ کرنے میں دیر نہیں لگاتے ہیں ۔آئینی حقوق دیئے بغیر متنازعہ علاقے میں ہر قسم کے ٹیکسز کی بھرپور مخالفت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان مسلہ کشمیر کا اہم فریق ہے اس علاقے میں سٹیٹ سبجیکٹ رول بحال کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ وفاق پرست پارٹیوں نے 70سالوں سے گلگت بلتستان کی عوام کو بے وقوف بنایا ہوا ہے اور اپنے مفادات کیلئے یہاں کے وسائل پر قابض ہیں ،لیکن اب ایسا نہیں چلے گا ،یہاں کی عوام اب باشعور ہوچکی ہے وہ اپنے حقوق کا دفاع کرنا جانتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان گلگت بلتستان کو مکمل آئینی حقوق فراہم نہیں کرسکتی ہے تو اس علاقے کو کشمیر طرز کا سیٹ اپ دے کریہاں کی عوام کو قومی دھارے میں شامل کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کی منتخب سیاسی قیادت اپنے زاتی مفادات کیلئے یہاں کے اجتماعی مفادات کا سودا کررہے ہیں جس کی وجہ سے آج یہاں کی عوام در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کی عوام ان مفاد پرست ممبران سے خیر ی کوئی توقع نہ رکھیں اور اپنے اجتماعی مفادات کے تحفظ کیلئے خود اُٹھ کھڑے ہوجائیں ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc