مولوی سرورشاہ،شاہ بیگ اور گلبر سانحہ 88 کے غازی ہیں سب سے بڑے فرقہ واریت کو ہوا دے کر معصوم لوگوں کی جانیں لینے والے اب پھر گلگت بلتستان میں فرقہ واریت کو ہوا دینے کیلئے سرگرم ہوگئے ہیں۔مولانا سجاالحق

چلاس (نمائندہ خصوصی )معروف عالم دین مولانا سجاء الحق نے کہا کہ مولوی سرورشاہ،شاہ بیگ اور گلبر سانحہ 88 کے غازی ہیں سب سے بڑے فرقہ واریت کو ہوا دے کر معصوم لوگوں کی جانیں لینے والے اب پھر گلگت بلتستان میں فرقہ واریت کو ہوا دینے کیلئے سرگرم ہوگئے ہیں۔اپوزیشن لیڈر کو بچانے کیلئے فرقہ واریت کا کارڈ استعمال کرنے والے جمعیت علماء اسلام کے نام نہاد لوگ اب اس خطے کے امن کو خراب کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 13 نومبر کو دیامر میں کوئی احتجاج نہیں ہوگا،ٹیکس کا ایشو حل ہوچکا ہے،جمعیت کے بعض عناصر حکومت پر دباو ڈالنے کیلئے حالات خراب کررہے ہیں۔دیامر کے لوگ کسی قسم کی احتجاج کا حصہ نہیں بنیں گے۔انہوں نے کہا کہ سانحہ 88 کے غازی سپیکر پر فرقہ واریت کا الزام لگانے سے پہلے اپنے گریبانوں میں جھانکیں

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc