این ٹی ایس کے نام پر حکومت گلگت بلتستان کی جانب سے شرمناک دھندے کا انکشاف، تعلیم یافتہ بیروزگاروں میں تشویش کی لہر دوڑگئی۔

گلگت ( پی ٹی نیوز) -گلگت بلتستان حکومت کے مختلف سرکاری محکموں میں این ٹی ایس کے تحت ہونے والی بھرتیوں میں انٹرویو کے لئیے زیادہ نمبر رکھنے سے سفارشی افراد کے تعیناتی سلسلہ بڑھ گیا ہے اور حقدار محروم چلے آ رہے ہیں زرائع کے مطابق ٹیسٹ کے بعد انٹرویو میں تیس نمبر رکھ کر بعض محکموں میں ٹیسٹ ٹاپ کرنے والوں کو ڈراپ کر کے منظور نظر افراد کو ملازمت دی جاتی ہے زرائع کے مطابق صوبائی حکومت کے مختلف محکموں کے لئیے خالی اسامیوں پر این ٹی ایس کے تحت ہونے والی بھرتیوں میں 70 فیصد ٹیسٹ اور 30 فیصد انٹرویو کے لیئے رکھے گئیے ہیں ۔ سرکاری دستاویزات کے مطابق حکومت نے مختلف سرکاری محکموں میں خالی اسامیوں پر بھرتیوں کیلئے 100 نمبر میں سے 70 نمبر کا تحریری امتحان این ٹی ایس نامی ادارے کو ٹھیکے پر دیے رکھا ہے جس میں امیدوار فیس ادا کرکے ٹیسٹ میں شامل ہوتے ہیں ۔ جبکہ اس ٹیسٹ میں مبینہ ہیراپھیری کیلئے گلگت بلتستان حکومت نے 30 نمبر اپنے پاس رکھ دیے ہیں ۔ این ٹی ایس میں اچھے نمبر لینے والے امیدواروں کو انٹرویو میں کم نمبر اور اپنے عزیز اقارب و سفارشی امیدواروں کو زیادہ نمبر دیکر ملازمت سےنوازا جاتا ہے اور این ٹی ایس میں زیادہ لینے والا امیدوار سرپکڑ کے بیٹھ جاتا ہے۔ماضی میں این ٹی ایس کے حوالے سے بھی ملکی اور گلگت بلتستان سطع پر ایسی شکایات عام ہوگئی لیکن اب گزشتہ ماہ گلگت بلتستان میں ریسکو 1122 میں ہونے والے این ٹی ایس کے 70 نمبروں میں سے میرٹ پر نمبر ون بنے والے کو راستے سے ہٹانے کیلئے 30 نمبروں کے ٹیسٹ خوب نوازا گیا اور میرٹ کی دھجیاں آڑانے کی نئی مثال قائم کی گئی ہے ۔ 1122 میں ہونے والی حالیہ بھرتیوں کے دستاویز سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ 30 نمبروں کا انٹرویو لینے والوں نے اپنے ایک قریبی عزیز کو نوازنے کیلئے 27 نمبر دیے جبکہ این ٹی ایس کے 70 میں سے صرف 39 نمبر حاصل کیے تھے ۔ جوکہ 27اعشاریہ 3 فیصد بنتا ہے ۔ جبکہ تحریری امتحان میں 39 فیصد لینے والے کو انٹرویو میں 84 فیصد سے زائد نمبروں سے نواز کر اس اسامی کیلئے تحریر امتحان میں 30 اعشاریہ 8 فیصد لیکر پہلی پوزیشن والے امیدوار کو انٹرویو میں 19 اعشاریہ 5 فیصد نمبر دیکر ملازمت حاصل کرنے کی دوڑ سے باھر پھینگ دیا گیا ۔ اسطرح این ٹی ایس کے ٹیسٹ میں 59 نمبر لیکر میرٹ لیسٹ کے پہلے نمبر والے امیدوار کو انٹرویو میں 22 جبکہ تحریری ٹیسٹ میں 53 نمبر لیکر دوسرے نمبر والے امیدوار کو 30 نمبر کے انٹرویو میں 27 نمبر دیکر پہلے نمبر پر لاکر سفارش اور رشتہ داری کی بنیاد پر ملازمت کرنے کا موقع فراہم کیا گیا ۔ دونوں متاثرہ امیدواروں نے ملازمت دینے کیلئے من پسند امیدواروں کو نوازنے کے اس واقعے پر چیف سکریٹری گلگت بلتستان کو دستاویزی ثبوت کیساتھ تحقیقات کیلئے تحریری اپیل کی ہے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc