گلگت بلتستان پر غیرقانونی ٹیکسز کی نفاذ کے حوالے سے ڈپٹی اسپیکر کا ایک اور متنازعہ بیان سامنے آگیا۔

غذر( پ،ر) یوم آذادی گلگت بلتستان کے حوالے سے ضلعی انتظامیہ غذر کی جانب گاہکوچ سٹی پارک میں منعقد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی اسپیکر ایک بار پھر جوش خطابت میں ہوش کھوگئے اور ٹیکس کے خلاف ہڑتال کی کال دینے والوں کو ملک دشمن قراردے دیا۔اُنہوں نے مزید کہا کہ ٹیکس نہ دینے والے ملک کیلئے وفادار کیسے ہوسکتا ہے ملکی دفاع کیلئے ہمیں ٹیکس دینا ہوگا۔اُنہوں نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان میں تمام نجی اور سرکاری سیکٹر میں کام کرنے والے ٹیکس دے رہے ہیں تو تاجری برادری کو کیا مسلہ ہے۔
اُن کے اس بیان پر عوامی حلقوں نے شدید تحفطات کا اظہار کرتے ہوئے اُنہیں ایک غیرسنجیدہ اور صرف اپنی کرسی کو حقوق سمجھنے والا انسان قرار دیا ہے،عوامی حلقوں نے تقریب کے بعد ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان کے عوام ٹیکس کے خلاف نہیں بلکہ متنازعہ حیثیت کی وجہ سے یہاں پر کسی بھی قسم کے ٹیکس کا نفاذ بین الاقوامی قوانین کے منافی ہیں لہذا جب تک گلگت بلتستان کی آئینی اور قانون حیثیت کو واضح کرکے باقاعدہ طور پر پاکستان میں شامل نہیں کرتے یہاں پر کسی بھی قسم کا ٹیکس نہیں لگایا جاسکتا، عوامی حلقوں کا یہ بھی کہنا تھا کہ افسوس کی بات ہے جن افراد کو عوام نے ووٹ دیکر عوامی حقوق کی تحفظ کیلئے اسمبلی تک پونچایا وہی لوگ آج اپنے مراعات اور عہدوں کو حقوق سمجھ بیٹھا ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc