حکومت کی پشت پناہی میں دیامر ریجن کے محکمہ برقیات میں میگا کرپشن کا انکشاف، عوامی حلقوں کا نیب سے تحقیات کا مطالبہ۔

چلاس(ڈسٹرکٹ رپورٹر)دیامر میں میگا کرپشن میں ملوث محکمہ برقیات کے ذمہ داران کے خلاف نیب کاروائی کر ے ۔ بٹو گاہ فیز فائیو میں صوبائی وزیر زراعت کے رشتہ دار کو نوازنے کیلئے چودہ کروڑ کا پی سی ون ساٹھ کروڑ تک پہنچا دیا گیا ۔ چھچی بٹو گاہ میں مارچ میں پاور ہاوس کا ٹینڈر ہوا ۔ صوبائی وزیر کے قریبی عزیز ٹھیکیدارکفیل نے اکیس کروڑ کا ٹھیکہ چودہ کروڑ روپے میں لیا ۔ مئی کے مہینے میں ورک آرڈر بھی ایشو کیا گیا ۔ لیکن ٹھیکدار نے نقصان کے ڈر سے کام شروع نہیں کیا ۔ صوبائی وزیر زراعت نے اپنے بھتیجے کو نقصان سے بچانے کیلئے محکمہ واٹر پاور کے ساتھ مک مکا کیا ۔ پاور ہاؤس کی جنریشن بڑھانے کے بہانے ساٹھ کروڑ کا نیا پی سی ون بنوایا گیا اور اس غیر قانونی پی سی ون کو منظور کروانے کیلئے حفیظ سرکار پر دباؤ ڈالنے کیلئے سرکار کے خلاف اخبارات میں بیانات دینے کا سلسلہ شروع کیا گیا ۔ وزیر اعلیٰ کے خلاف بیانات دیکر کالے دھند کو سفید کر نے پر مجبور کیا گیا ۔ ساٹھ کروڑ کا یہ پی سی ون منظوری کیلئے وزیر اعلیٰ ، چیف سیکریٹری اور پلاننگ کے دفتروں میں گھوم رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار تحریک انصاف گلگت بلتستان کے سینئر نائب صدر شاہ ناصر ، جماعت اسلامی کے سابق امیر عطاء اللہ ، نجیب اللہ ، پیپلز پارٹی دیامر ڈویژن کے جنرل سیکریٹری محمد ولی ایڈوکیٹ ، صدر تحریک انصاف ضلع دیامر و امیدوار قانون ساز اسمبلی عتیق اللہ ایڈوکیٹ نے دیامر پر یس کلب میں پر یس کانفرنس کرتے ہو ئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ بٹو گاہ فیز 5 پانی کی کمی کے باعث کسی طرح بھی تین میگا واٹ کیلئے موزوں نہیں ہے ساٹھ کروڑ کے پی سی ون میں بھی لکھا ہے کہ یہ پاور ہاؤس صرف تین مہینے کیلئے کارآمد ہے حقیقت میں پانی کی کمی کے باعث دو ماہ بڑی مشکل سے چلے گا ۔ کسی کو نوازنے کیلئے خزانے کو ساٹھ کروڑ کا ٹیکہ لگا نا کسی طور پر منظور نہیں ۔ نئے پی سی ون کے مطابق پاور ہاؤس بننے سے ہو نے والے نقصانات پر فزیبلٹی بنانے والوں آنکھیں بند کر دی ہیں ۔ تقریبآ تین ہزار کنال قابل کاشت اراضی بنجر ہو جائے گی ۔ بٹو گاہ کے عوام اتنا بڑا نقصان برداشت کر نے کے قابل نہیں ہیں ۔ عوام جان پر کھیل کر یہ منصو بہ ناکام بنائیں گے ۔ پاور ہاؤس کا ٹینڈر کے مطابق کام مکمل کر ایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ چیف سیکریٹری گلگت بلتستان ، فورس کمانڈر اور کمشنر دیامر ڈویژن اس میگا کرپشن میں ملوث محکمے کے ذمہ داروں کے خلاف قانو نی کاروائی عمل میں لاکر نیب کے حوالہ کیا جائے ۔ انہو ں نے کہا کہ کرسی بچانے کیلئے وزیر اعلیٰ وزیروں کے ہر جائز ناجائز کا م کر نے کیلئے تیار ہیں ۔ محکمہ پی ڈبلیو ڈی واٹر اینڈ پاور با اثر افراد کے سامنے بھیگی بلی بنا ہوا ہے ۔ میرٹ اور شفافیت کے دعوے کھل کر سامنے آگئے ہیں ۔ اقراء پروری وزیروں کی بلیک میلنگ زوروں پر ہے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc