سکردو روڈ کی تعمیر کے حوالے سے اسپیکر قانون ساز اسمبلی فدامحمد ناشاد کا ایسا انکشاف جسے پڑھ آپکی ہنسی چھوٹ جائے۔

سکردو(ٹی این این) جگلوٹ سکردو کی تعمیرکا مسلہ ہر گزرتے دن کے ساتھ پیچیدہ ہوتی جارہی ہے کیونکہ وفاق پاکستان اس روڈ کی تعمیر کیلئے جیب سے پیسہ خرچہ کرنے کیلئے تیار نہیں اور متنازعہ حیثیت کے سبب کوئی بھی بین الاقوامی بنک یا ادارہ قرضے کی بنیاد پر اس سڑک کی تعمیر کیلئے انویسمنٹ کیلئے راضی نہیں۔لیکن مقامی حکومت کی ہمیشہ سے یہی کوشش رہتی ہے کہ کسی بھی طرح جھوٹے وعدوں کے ذریعے اُنکی حکومتی مدت پوری ہوجائے یہی وجہ ہے کہ وزیر اعلیٰ سے لیکر اسپیکر تک ہمیشہ اس سڑک کی تعمیر کے حوالے سے جھوٹ بولتے رہے ہیں ۔گزشتہ مہینے مرکزی امامیہ جامع مسجد کے امام کی جانب سے سڑک کی تعمیر میں تاخیر پر بلتستان سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی کو استعفیٰ دینے کا مطالبہ سامنے آتا تھا اُس مطالبے کو گلگت بلتستان کے عوام میں بڑی پذیرائی ملی تھی لیکن اچانک حکومت نے سکردو روڈ کی تعمیر کا اعلان کرکے عوام کو حیران کردیا اور پیش امام صاحب نے بھی اُس جھوٹ سچ سمجھ کر قبول کر لیا۔ اس مسلے کو لیکر فداناشاد کی طرف سے بلتستان کے عوام کو بیوقوف بنانے کیلئے ایک تازہ بیان سامنے آیا ہے جس میں مصوف نے دعوی کیا ہے کہ سکردو روڈ کو سی پیک میں شامل کیا گیا ہے۔ تعجب اس بات پر ہے کہ یہ کیسے ممکن ہوسکتا ہے نہ اُس نے سوچا ہوگا نہ عوام میں شعور ہے کیونکہ سی پیک سے متنازعہ حیثیت کے سبب پورے گلگت بلتستان کو کچھ نہیں ملا رہا ہے تو صرف سکردو روڈ کیلئے الگ سے قانون کہاں سے آگیا سوچنے والی بات ہے۔ناشاد کی اس بیان کو لیکر سوشل میڈیا پر خوب جگ ہنسائی ہورہی ہے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc