کھرمنگ میں پیٹرول پمپ نہ ہونے کی وجہ سے دوکانداروں نے دوکانوں کو پیٹرول سٹیشن بنا لیا، غذائی مواد میں پیٹرول کی بو شامل ہونے سے بیماریاں پھیلنے کا خدشہ۔ ضلعی انظامیہ خواب خرگوش میں مدہوش۔

کھرمنگ( تحریر نیوز) ضلع کھرمنگ میں پیٹرول سٹیشن نہ ہونے کی وجہ سے دوکانداروں کی چار چاند لگی ہوئی ہے، غذائی اشیاء سے ذیادہ پیٹرول منافع بخش کاروبار کی شکل اختیار کرچُکی ہے۔ ضلع کھرمنگ کے مہدی آباد غاسنگ، منٹھوکھا ، مادھوپور، گوہری ، کمنگو،طولتی،پاری،کھرمنگ،حمزہ گون سمیت تمام علاقوں کے دوکانوں میں غذائی مواد کے ساتھ مہنگے داموں پیٹرول 90 سے 100 روپیہ فی لیٹر فروخت کیا جارہا ہے جبکہ اصل قیمت 73 روپیہ فی لیٹر ہے۔ لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں۔ عوام کی طرف سے مسلسل شکایت کیا جارہا ہے کہ دوکانوں میں اشیاء خوردنوش کے ساتھ پیٹرول رکھنے کی وجہ سے بیماریاں پھوٹ پڑنے کا خدشہ لیکن ضلعی انتظامیہ ان تمام معاملات سے بے خبر نظر آتا ہے۔

ضلعی انتظامیہ کو چاہئے کہ اس حوالے سے کاروائی کریں اور پیٹرول فروخت کرنے کیلئے الگ دوکانیں بنانے کیلئے قانون سازی کریں اور پیٹرول من مانی کی قیمت پر فروخت کرنے والے دوکانداروں کے خلاف قانونی کاروائی کریں۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc