تھک نیاٹ اور بابوسر کو ملاکر فوری تحصیل کا درجہ دیا جائے ،تحصیل کا درجہ نہ ملنے کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی والے یہ علاقے زندگی کے تمام تر بنیادی سہولیات سے محروم ہیں اور انتظامی سطح پر بھی لوگوں کو سخت ترین مشکلات کا سامنا ہے

چلاس(تحریر نیوز)تھک نیاٹ اور بابوسر کو ملاکر فوری تحصیل کا درجہ دیا جائے ،تحصیل کا درجہ نہ ملنے کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی والے یہ علاقے زندگی کے تمام تر بنیادی سہولیات سے محروم ہیں اور انتظامی سطح پر بھی لوگوں کو سخت ترین مشکلات کا سامنا ہے ،لہذا آبادی ،رقبہ اور عوامی مسائل کو سامنے رکھتے ہوئے حکومت تحصیل کا درجہ دے ۔ان خیالات کا اظہار تھک نیاٹ یوتھ قومی مومنٹ کے صدر ضیاء اللہ تھکوی ،ن لیگ دیامر کے نائب صدر سجاء الحق ،ڈویژنل نائب صدر حاجی کالا خان،حاجی شاہ خان،نمبردار بشیر،نمبردار زبیر نمبردار کانٹا ،نمبردار مقابل شاہ ،حاجی مبارک و دیگر نے اپنے ایک بیان میں کیا ۔انہوں نے کہا کہ تھک بابوسر ایک پسماندہ علاقہ ہے ماضی میں یہ علاقہ حکومتی عدم توجہی کے باعث دنیا کی نظروں سے اجھل رہا اور اس علاقے کو ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت نظرانداز کیا گیا ۔وزیر اعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن اور چیف سیکرٹری عوام کی وسیع تر مفاد میں اس علاقے کو تحصیل کا درجہ دے کر عوام کا درینہ مسلہ حل کریں ۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی اپنے متوقع دورہ چلاس کے موقع پر تھک بابوسر کو تحصیل بنانے کا اعلان کریں ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc