شکوک شبہات ختم، مسلہ کشمیر کی حل تک کیلئے گلگت بلتستان کو عبوری صوبہ بنانے کا حتمی فیصلہ ہوگیا۔

اسلام آباد( ٹی این این نامہ نگار خصوصی) سابق رکن گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی جاوید حسین کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اس بات کی یقین دہانی کرائی ہے کہ گلگت بلتستان کو عبوری صوبہ بنانے کا فیصلہ حتمی ہے۔ اُنہوں نے شاہ محمود قریشی کے حوالے سے بتایا کہ ہم گلگت بلتستان کو مکمل صوبہ بنانا چاہتے تھے مگر مسئلہ کشمیر کیلئے کشمیریوں نے بڑی قربانیاں دی ہیں اور ہم ان قربانیوں کو نظر انداز نہیں کر سکتے ہیں لہذا تنازعہ کشمیر کے تصفیے تک گلگت بلتستان عبوری طور پر پاکستان کا صوبہ رہے گا جب مسئلہ کشمیر حل ہوکے کشمیریوں کو رائے شماری کا حق دیا جائے گا تو گلگت بلتستان کو مکمل صوبہ بنایا جائے گا۔ جاوید حسین نے مزید کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےواضح کیا ہے کہ گلگت بلتستان کو عبوری آئینی صوبہ بنانے سے مسئلہ کشمیر متاثر نہیں ہوگا، اس حوالے سے ہم نے تمام متعلقہ اداروں سے مشاورت کی ہے جبکہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے بھی اپنے فیصلے میں گلگت بلتستان کو عبوری آئینی صوبہ بنانے کی تجویز دی ہے اور کہا ہے کہ عبوری آئینی صوبہ بنانے سے مسئلہ کشمیر متاثر نہیں ہوگا۔ اُنہوں نے کہا کہ ہماری خواہش تھی کہ آئین میں ترمیم کرکے خطے عبوری آئینی صوبہ بنانے کا بل گلگت بلتستان کے الیکشن سے قبل قومی اسمبلی میں پیش کریں وفاقی پارلیمانی جماعتوں نے عبوری آئینی صوبہ بنانے کا بل گلگت بلتستان کے الیکشن کے بعد قومی اسمبلی میں پیش کرنے کی تجویز دی اور سب نے اس پر اتفاق کیا ہے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc