سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال میں سٹاف کی کمی کے باوجود کئی گریڈ ون کہاں نوکری کررہا ہیں تحریر نیوز نے بڑا کھوج لگا لیا

 سکردو(ٹی این این) سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال میں چار اضلاع کے مریضوں کا بوجھ ہونے کی وجہ سے پہلے سے مسائل سے دوچار ہے اب کرونا وائرس کی وجہ سے سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال میں ڈاکٹرز اور سٹاف کی شدید کمی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں جبکہ زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال کے کئی گریڈ ون ڈاکٹروں کے گھروں میں ان کے گھروں میں ذاتی ملازم بن کر گھر کے کام کررہا ہے دوسری طرف سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال میں گریڈ کی کمی وجہ مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اوپر سے کئی ڈاکٹروں نے غیر قانونی طور کئی گریڈ ون ملازم گھر کا ملازم بنا کر رکھا ہوا ہے جبکہ ایک ڈاکٹر کے گھر پر کام کرنے والے ملازم نے اپنا نام نہ نہ لکھنے اور نہ لینے کی شرط پر بتایا کہ ہم سے گھر سارا کام لیا جاتا ہے گائے بکریوں کی دیکھ بال سے لیکر کھیتی باڑی کا کام تک لیا جاتا ہے ہم لوگوں سے جبری مشقت سے کام لیا جاتا ہے اس مہنگائی کے دور ہم نوکری چھوڑ بھی سکتے اپنے افسر کے سامنے کچھ بول بھی نہیں سکتے ہیں ہمیں کام میں تھوڑا کوتاہی کیا گیا تو بھی ہمیں طرح طرح کی دھمکی دی جاتی ہے اور ہمیں اتوار اور دیگر چھٹی بھی نہیں ملتا چوبیس چوبیس گھنٹے ڈیوٹی لیا جاتا ہے جبکہ گلگت بلتستان کے دیگر سرکاری اداروں کا بھی یہی حال ہے گریڈ ون کے ساتھ ظلم کیا جاتا ہے جب کئی سرکاری افسران کے گھروں میں تین چار گریڈ ون رکھا ہوا ہے اپنے بچوں کیلئے ایک سرکاری ڈرائیور بھی رکھا ہوا ہے ان ملازمین نے گورنر گلگت بلتستان نگران وزیر اعلی گلگت بلتستان اور چیف سیکرٹری سیکرٹری صحت اور اعلی حکام کو اس حوالے سے نوٹس لینے کا مطالبہ کردیا ہے اور متعلقہ حکام کو فوری اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے اور سکردو ڈسٹرکٹ ہسپتال میں سٹاف کی شدید کمی کے اوپر ڈاکٹروں نے کئی گریڈ ون کو اپنے گھروں میں رکھنے کا نوٹس لیتے ہوئے ان گریڈ ون کو ہسپتال میں تبادلہ کرنے کیلئے فوری اقدامات کرنے کی ضرورت ہے

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc