جڑی بوٹی ہمالیائی جنسینگ کس چیز کا طاقت؟

کبھی آپ نے سنا ہے کہ کسی پودے کا بیج فنجائی کے ملاپ کے بغیر نہیں اگتا؟ آرکڈ فیملی کے پودوں کی نسل دنیا سے تیزی کے ساتھ معدومیت کے خطرے سے دوچار ہے۔ اسے بیج سے اگنے کے لئے سیمبائیوسس چاہئے۔ کسی فنجائی کے سائے میں ہی اسکے بیج اگنے کی صلاحیت حاصل کر پاتے ہیں۔ زیر بحث پودا گلگت بلتستان کے مرغزاروں میں عام پایا جاتا ہے۔ یہ ہائی ویلیو ادویاتی پودوں میں شمار کئے جاتے ہیں۔ سادہ لفظوں میں اسے ثعلب پنجہ بھی کہتے ہیں۔ شگر کے لوگ اسے “لڑانو مندوق ” کہتے ہیں۔ حکمائے ہند اسے جنسینگ کے نعم البدل کے طور پر جنسی طاقت کے حصول کے لئے دھڑا دھڑ بیچ رہے ہیں۔ پچھلے سال اسکی ایک کلو جڑ کی قیمت بیس ہزار تھی۔ آپ اندازہ لگائیں لوگ جنس کے پیچھے کیسے ہاتھ دھو کے پڑے ہیں۔
اسکی جڑوں سے جوس بناکر اعصابی طاقت کے لئے جدید سائینس مؤثر اجزا کی موجودگی کا بتاتے ہیں۔ حشوپی باغ میں ایک میڈیسنل پلانٹ پرزرویشن بلاک میں اسے کاشت کی ہے۔ہم چاہتے ہیں کہ اسکو معدومیت سے بچانے کے لئے روٹ ڈیوزن اور روٹ کٹینگ کے ذریعے مزید پودے تیار کرے۔ اپنے کسان کو یہ تیکنیک سکھائے اور غیر روایتی فصلات کی طرف بھی لوگوں کو راغب کرے۔ تبتی امچی ازم میں بھی اس پودے سے بے شمار کام لئے جاتے ہیں۔ ہڈیوں کی مضبوطی اور فریکچر، معدے کے السر اور طاقت کے لئے امچی اسے استعمال میں لاتے تھے۔ لازمی ہے کہ کسی بھی جڑی بوٹی کے استعمال سے پہلے اسکی مکمل معلومات حاصل کرے۔ لہذا خود سے استعمال کی ممانعت ہے۔ اسکے جڑ کو سکھانے کی خاص ٹیکنالوجی ہے جسکے بغیر اسکی مارکیٹ میں قیمت نہیں ملتی۔ اپنے خزانوں کی کھوج اور حفاظت ہم سب کا فرض ہے آئیے اس پودے کی کاشت پر تجربات کرتے ہیں۔
تحریر جی ایم ثاقب

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc