پی پی پی گلگت بلتستان نے مرکزی ریلیف کمیٹی کے طرف سے ائے ہوئے امدادی سامان سیکرٹری ہیلتھ کے حوالے کردیا

گلگت(پ۔ر) پاکستان پیپلزپارٹی گلگت بلتستان کی صوبائی سیکریٹری اطلاعات سعدیہ دانش نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پیپلزپارٹی گلگت بلتستان نےصوبائی صدر امجد حسین ایڈووکیٹ کی قیادت میں پیپلزپارٹی کی مرکزی ریلیف کمیٹی کی طرف سے آئے ہوے طبی آلات سیکریٹری ہیلتھ گلگت بلتستان کے حوالے کئے۔ چیرمین بلاول بھٹو زرداری نے ملک میں ہیلتھ ایمرجنسی کی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوئے پیپلزپارٹی کی ریلیف کمیٹی تشکیل دی ہے جو ملک کے تمام صوبوں کو طبی آلات کی صورت میں مدد فراہم کر سکیں اس سلسلے میں پارٹی کی طرف سے پہلے ضلع نگر اور سکردو کو بھی طبی آلات فراہم کیے جا چکے ہیں اور دیگر اضلاع میں بھی جلد از جلد فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔ طبی آلات میں پی پی ایز، ٹیسٹنگ کٹس اور ماسک شامل تھے۔ سیکریٹری اطلاعات نے مزید کہا کہ گلگت بلتستان ٹیسٹنگ کا پراسیس بہت سست اور رپورٹس التوا کا شکار ہیں لوگوں کی رپورٹس دو دو ہفتوں تک میسر نہیں ہوتی اس طرح کے ٹیسٹس کا کیا فائدہ جس کی تشخیص تک مریض سے دوسرے لوگوں تک بھی وائرس منتقل ہو چکا ہوتا ہے یا لوگ بغیر رپورٹس کے ہی اپنی روزمرہ زندگی میں مصروف ہو جاتے ہیں جس سے لوکل ٹرانسمیشن ہو رہی ہے۔ وزیر اعلی یہ دعوی تو کرتے ہیں کہ گلگت بلتستان میں کورونا وائرس کو کنٹرول کیا گیا ہے ایسا ہے تو ہزاروں کی تعداد میں جو سیمپلز پینڈنگ ہیں ان کی رپورٹس کا کیا ہوگا؟
حکومت کا لاک ڈاون میں نرمی کا فیصلہ کرنے اور تجارتی مراکز کھلنے سے لوکل سطح پر بہت زیادہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے خطرات بڑھ گئے ہیں حکومت نے لاک ڈاون میں نرمی تو کی لیکن WHO کی ایس او پیز کے مطابق سوشل ڈسٹینسنگ کو برقرار رکھنے کے اصولوں پر عملدرآمد کو یقینی بنانے میں ناکام رہی ہے۔ نیشنل میڈیا پر بیٹھ کر سب اچھا ہے کے گن گانے والے اور مریضوں کو ٹراوٹ مچھلی کھلانے کے دعویدار وزیراعلی کو استور میں دہایئاں دیتے ہوے کرونا کے مریض اور قرنطینہ سینٹرز میں مناسب خوراک کی کمی اور صحت کی بنیادی سہولیات کی عدم فراہمی پر سراپا احتجاج روزہ دار مریضوں کی آواز کیوں سنائ نہیں دے رہی اور قرنطینہ سینٹرز میں مریض کی موت اس کو بروقت طبی سہولت نہ ملنے کا ثبوت اور صوبائی حکومت کے بلندوبانگ دعووں کی نفی ہے۔ حقیقت تو یہ ہے کہ وزیر اعلی نے قرنطینہ سینٹرز کے نام پر بھی کرپشن کا بازار گرم کیا ہے اور ان کے ٹھیکے بھی اپنے ہی رشتہ داروں کو دے کر کرپشن اور اقرباء پروری کی مثال قائم کردی ۔

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc