لاک ڈاون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے گلگت بلتستان میں اخبارات کی فروخت جاری،کرونا وائرس پھیلنے کا خدشہ۔

گلگت(نامہ نگارخصوصی)کرونا وائرس کے پھیلاو کے خدشہ کے باعث پورا گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں لاک ڈاون ہے۔ لیکن گلگت اور مختلف علاقوں میں اخبارات کی فروخت تاحال جاری جس کے کرونا وائریس پھیلانے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔عوامی حلقوں کی جانب سے اخبار فروشی پر جلد پابندی لگانے کا مطالبہ کیا جارہا ہے تاکہ اس موزی مرض کے پھیلاؤ روکا جاسکے۔ گلگت بلتستان سمیت پورے پاکستان کے مختلف بنکوں اور دیگر پبلک مقامات پر مکمل پابندی عائد کردی گئی ہے۔ لیکن دوسری جانب اخبار فروشی کا عمل جاری ہونا ایک المیہ سے کم نہیں ہے۔ایک اخبار کئی لوگوں کے ہاتھ لگنے کے بعد قارئین کے ہاتھوں میں چلا جاتا ہے اور ایک اخبار کئی کئی لوگ پڑھ لیتے ہیں اور ایک سے دوسرے اور تیسرے ہاتھوں چلتا رہتا ہے جس سے قوی طور پر وائریس پھیلنے کا بہت زیادہ خدشہ ہے۔عوامی حلقوں نے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام ہاکر جو دن بھر اخبار فروشی کرکے اپنی گزر بسر کررہے ہیں کو حکومت اس سنگین صورت حال کے دوران گھروں میں بیٹھا کر انہیں راشن اور گھروالوں کے تمام تر ضروری چیزیں مہیاں کی جائے تاکہ ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے نہیں پڑھ سکے۔عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ویسے بھی اس جدید دور میں اخبارات پرنٹ کرکے پڑھنے کے بجائے،آن لائن یعنی انٹرنیٹ کے ذریعے اخبارات اور بہت سے نیوز ویب سائٹس کے ذریعے ہر پل پل میں خبریں اور اطلاعات مل رہی ہیں تو اخبار کو پرنٹ کرکے اس کرونا وائریس پھیلنے اور سنگین صورت حال میں لوگوں کو مصیبت میں نہیں ڈالا جائے۔عوامی حلقوں نے وزیر اعلیٰ، فورس کمانڈر،گورنر گلگت بلتستان اور چیف سیکریٹری سے بالخصوص گلگت شہر اور دیگر تمام اضلاع میں اخبارات کی پرنٹ فارم میں فروخت کرنے پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا ہے اور نہیں کرنے کی صورت میں اور اس سے کرونا وائریس پھیلنے کا ذمہ دار حکومت اور اخبار مالکان ہونگے۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc