گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی کیا ہے؟ اور وہاں کس قسم کے کام ہوتے ہیں صدر سپریم اپلیٹ کورٹ بار نے واضح کر دیا۔

گلگت( تحریر نیوز) صدر سپریم اپلیٹ کورٹ سنئیر بار ایڈوکیٹ احسان علی نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان کی موجودہ اسمبلی ایک بے اختیار ادارہ ہے اس اسمبلی کے اجلاسوں میں کچلے ہوئے عوام کے مسائل و مشکلات کی حل کیلئے اُن کے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں۔گلگت بلتستان میں پیدا ہونے والی دولت وسائل دولت اور پیداوار کو کنٹرول اور اسے تقسیم کرنے کا اختیار غیر منتخب لوگوں کے پاس ہے۔ عوام کی معشیت کو ترقی دینے مقامی طور پہ پیدا ہونے والی انڈسٹریل را مٹیریل کی بنیاد پہ یہاں کارخانے لگانے، ہائیڈل پاور کے پراجیکٹس کیلئے سرمایہ کاری لانے کا اختیار بھی اس اسمبلی و حکومت کے پاس نہیں اور نہ ہی بے لگام بیوروکریسی اور دیگر ریاستی ادارے اسمبلی کے زیر کنٹرول نہیں بلکہ یہ ریاستی ادارے اور بیوروکریسی اسمبلی و حکومت کو کنٹرول کرتے ہیں۔ المیہ یہ ہے کہ ممبران ان بنیادی عوامی ایشوز پہ تحریک چلانے کیلئے تیار نہیں۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc