شہر اقتدار کا لاورث کالج جہاں غریبوں کے بچے پڑھتے ہیں اس لئے کوئی پوچھنے والا نہیں۔

گلگت( پ،ر) محکمہ تعلیم کا گلگت بلتستان میں تعلیمی انقلاب کے حوالے سے مسلسل اخباری بیانات اپنی جگہ لیکن حقیقت یہ ہے کہ جہاں وزیر تعلیم کے حلقے کے عوام بنیادی بہتر تعلیمی سہولیات سے محروم ہیں وہیں شہر اقتدار میں موجود  ڈگری کالج مناور کا کوئی پرسان حال نہیں۔ اس کالج میں زیر تعلیم طلبہ چار دیواری ،پانی ، بہتر کلاس روم ، لیبارٹیرز اور دیگر بنیادی ضروریات سے محروم ایک ویران علاقے میں تعلیم حاصل کرنے پر مجبور ہیں۔

حکومت گلگت بلتستان کو چاہئے کہ تعلیمی انقلاب کے نعروں سے پہلے شہر اقتدار میں موجود کالجوں اور اسکولوں کی حالت زار پر توجہ دیں جو حکمران اپنی ناک کے نیچے موجود تعلیمی اداروں کی بہتر دیکھ بھال نہیں کرسکتے ان سے کس طرح یہ توقع کیا جاسکتا ہے کہ وہ کسی دور دارز علاقے کے بارے میں فکر مند ہوتا ہو۔

ڈگری کالج مناور کے اسٹوڈنٹس سے حکومت سے مطالبہ یا ہے کہ چاردیواری ،پانی کا بندوبست،کلاس رومز اور لیب بنوائیں ورنہ ہم شاہرہ قراقرم بلاک کرکے دھرنہ دینے پر مجبور ہونگے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc