سکردو سانحہ روندو کے لواحقین نے حکومتی عدم توجہی اور مجرمانہ غفلت کے خلاف احتجاجی مظاہرے کا اعلان کردیا۔

سکردو(پ،ر)سانحہ روند یلبو کے لواحقین کا سکردو کے مقامی ہوٹل میں اہم ہنگامی اجلاس۔ اجلاس میں بلتستان اسٹوڈنٹس فیڈریشن، گلگت بلتستان یوتھ الائنس،آٖ ل بلتستان مومنٹ اور سول سوسائٹی بلتستان کے رہنماوں نے شرکت کی۔تفصیلات کے مطابق یہ ہنگامی اجلاس سانحہ یلبو کے لواحقین کی جانب سے بُلایا گیا تھا جس میں کہا گیا کہ سکردو روٹ پر المناک ناک حادثے میں 13 افراد جابحق ہوئے اور کئی افراد کی لاشیں ابھی تک لاپتہ ہیں لیکن حکومت کی جانب مکمل خاموشی انتہائی تشویشناک قرار دیا ہے۔اجلاس میں لواحقین اور مزکورہ جماعتوں کے رہنماوں نے حکومت اور ٹرانسپورٹ مافیا کی غفلت کی وجہ سے پیش آنے بس حادثے پرتحقیقات کرکے اس واقع ملوث افراد کو کڑی سزا دینے لاپتہ افراد کی جسد خاکی تلاش کرنے حکمت عملی طے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اجلاس میں متفقہ طور پر حکومت کی مجرمانہ غفلت کے خلاف اعلامیہ جاری کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ پہلے مرحلے میں کھرمنگ میں احتجاج کیا جائے گاجبکہ دوسرے مرحلے میں شگر میں احتجاج ہوگا اور آخری مرحلہ مکمل دھرنا یلبو کے مقام پر ہوگا۔ لہذا حکومت ایک ہفتے کے اندر لواحقین کو انصاف دلائیں اور میتوں کی تلاش کے عمل کر تیز کریں۔

About TNN-GB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc