لینڈ ریفارمز بل کے خلاف عوامی ایکشن کمیٹی نے سخت ردعمل دیتے ہوئے بڑا اعلان کردیا

نگر(نمائندہ خصوصی) عوامی ایکشن کمیٹی کے وائس چیئرمین فدا حسین نے کہا کہ لینڈ ریفارمز ایکٹ عوام کے رد عمل کے بدولت نہیں آئے گا ہم اپنی زمینوں کی بندر بانٹ ہونے نہیں دینگے ہماری زمین ہماری مرضی ہے کوئی بھی ہماری زمین پر اپنی مرضی چلانے کی کوشش کرے گا تو اس کے سنگین نتائج بر آمد ہونگے ۔نگر چھلت علمدار چوک میں عوامی ایکشن کمیٹی کے زیر اہتمام احتجاجی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عوامی ایکشن کمیٹی کے جنرل سیکریٹری پروفیسر سید یعصب الدین نے کہا کہ ہمارے ساتھ ملازمت کے حوالے سے مظفر آباد کے تناظر میں ٹریٹ کیا جائے گلگت بلتستان کے قدرتی وسائل عوام کے ہیں ہم ایک انچ زمین دینے کے لئے تیار نہیں ہیں عوامی نمائندے اگر غلطی سے بھی لینڈ ریفارمز ایکٹ پر دستخط کرینگے تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہونگے ہم پورا گلگت بلتستان کو جام کرینگے اور نہ ختم ہونے والا احتجاج شروع کیا جائے گا، عوامی ایکشن کمیٹی کے مرکزی رہنما مسعود الرحمن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امن امان کے بدولت آج ہم ایک قوم بن گئے ہیں ہمیں امن وامان کے ساتھ اپنے حقوق کے تحفظ کے لئے کام کرنا ہوگا اور ہم ہر قسم کے آرڈر کو مسترد کرتے ہیں اور اب ہم ایک ہیں ۔ عوامی ایکشن کمیٹی کے مرکزی رہنما جہانزیب انقلابی نے کہا کہ عوامی ایکشن کمیٹی کا کوئی سیاسی مقصد نہیں ہے ہمارا مقصد صرف غریب عوام کے مسائل کو حل کرنا ہے آنے والے انتخابات میں عوام امیدواروں سے سوال کریں کہ آرڈر کیا ہے ؟ لینڈ ریفارمز ایکٹ کیا ہے ابھی تک اجتماعی حقوق اور سیاسی حقوق کے لئے کونسا اقدام اٹھایا ہے ؟ پروفیسر سید یعصب الدین نے کہا کہ کوئی بھی خوش فہمی میں نہ رہے اب ہم عوام کے ساتھ غداری کرنے والوں سے پائی پائی کا حساب لینگے اور عوام اپنے آپ کو اپنے حقوق کے لئے تیار رکھیں اور ایک نیا آرڈر لیکر آرہے ہیں اس کو ہم مسترد کرتے ہیں اب گلگت بلتستان کی عوام آرڈر کرے گی اور وفاق اس کو مانے گا مزید اب کسی بھی قسم کا آرڈر قبول نہیں ہے ۔

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc