گلگت بلتستان میں شدید برفباری حکومتی نااہلی پر عوامی حلقوں میں تشویش کی لہر دوڑ رہی ہیں

سکردو(ٹی این این) گلگت بلتستان میں ہفتے کے روز سے سے برفباری کا سلسلہ جاری ہے، شدید برف باری کے باعث نظام زندگی مفلوج ہے اور لوگ گھروں کو محصور ہو کر رہ گئے ہیں ۔سڑکوں پر ٹریفک نہ ہونے کے برابر ہے ساتھ ہی بلتستان ڈویژن کے ہیڈکوارٹر سکردو سے باقی اضلاع کا زمینی رابطہ بھی منقطع ہوچکا ہے،ایسے میں عوام کو سخت مشکلات اور پریشانی کا سامنا ہے،سکردو میں شدید برفباری کے باعث بجلی اور انٹرنیٹ سروس معطل ہے ،سکردو شہر میں تمام کارباری مراکز بھی 80 فیصد کے قریب بند ہیں جس کے باعث لوگوں کی اشیائے ضروریہ تک رسائی مشکل ہو گئی ہے۔ بلتستان کے چاروں اضلاع کے سرکاری دفتروں میں پیر کے روز ملازمین کی حاضری  نہ ہونے کے برابر ہے ۔ بلتستان میں رواں برس سردی کی شدت میں کافی اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے، سکردو شہر میں منفی 21 تک ریکارڈ کیا گیا، جبکہ بالائی علاقوں میں پارہ نقطہ انجماد سے منفی 28 تک گر گیا ہے جو کہ گزشتہ تیس سالوں میں سب سے زیادہ ہے ۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان نے برف باری کے باعث بند شاہراہوں کو برف باری کا سلسلہ رکنے کے بعد کھولنے کیلئے متعلقہ محکموں کو ہدایت بھی جاری کردی ہیں ۔ شدید برف باری اور خراب موسم کے باعث سکردو اور اسلام آباد کے درمیان پی آئی اے کی پرواز بھی کئی روز سے معطل ہے۔ سوشل ایکٹوسٹ نے سوشل میڈیا پر مطالبہ زور پکڑتا جارہا ہے اور مطالبہ کردیا ہے کہ بلتستان میں ایمرجنسی نافذ کرتے ہوئے عوام کو سہولیات فراہم کیا جائے

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc