ارمی چیف آف کے نام گلگت سکردو روڈ اور ایف ڈبلیو او کےحوالے سے سخت انکشافات کرتے ہوئے منظور پروانہ کا کھلا خط ۔

بخدمت جناب چیف آف آرمی سٹاف پاکستان جنرل جاوید قمر باجوہ صاحب

اسلام علیکم

امید ہے کہ آپ خیریت سے ہونگے، پاکستان آرمی کا ایک ادارہ ایف ڈبلیو او جگلوٹ تا سکردو روڈ کی تعمیر پر معمورہے۔ گلگت بلتستان کے عوام نے ایف ڈبلیو او کو اس روڈ کی تعمیر کا ٹھیکہ دینے پر روز اول سے ہی تحفظات کا اظہار کیا تھا کیونکہ عوام کو خدشہ تھا کہ روڈ کی تعمیر کے دوران عوامی املاک کو نقصان پہنچانے کی صورت میں ان کی شنوائی نہیں ہوگی اور ایف ڈبلیو او کے ذمہ داران اپنی وردی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے عوام کو بے بس اور سول انتظامیہ کو بے اثر کر دیں گے۔ تا ہم اس وقت ایف ڈبلیو او کے ڈی جی جنرل محمد افضل صاحب نے گلگت اور سکردو میں عوامی جرگہ کر کے یقین دلایا کہ ایف ڈبلیو او روڈ کی معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔ عوامی اراضی و املاک کو نقصان پہنچانے اور زمینوں پر قابض ہونے سے اجتناب کرے گی۔

جناب عالی

جنرل افضل صاحب کی یقین دہانی کے باوجود سکردو روڈ کی تعمیر کا آغاز سے ہی ایف ڈبلیو او سکردو گلگت روڈ کی تعمیر کے لئے ریت پتھر، بجری اور مٹی عوامی ملکتیی زمینوں سے جبری اٹھارہی ہے اور ان تعمیراتی مٹیریل کا عوام کو معاوضہ نہیں دیا جا رہا ہے۔ایف ڈبلیو او نے عوامی ملکیتی زمینوں پر جبری کرش پلانٹ اور اسفالٹ پلانٹ نصب کئے ہیں، اور عوام کی مٹیریل ریسورسس کو بلا معاوضہ استعمال کر کے عوام کو ان کی قدرتی وسائل سے محروم کر دیا ہے۔ دوسری طرف ایف ڈبلیو او سکردو گلگت روڈ پر عوامی چراگاہوں اور ملکیتی زمینوں پر قبضہ کر کے ہوٹل بنانے میں لگا ہوا ہے جس سے سکردو گلگت روڈ پر چھوٹے چھوٹے چھپر ہوٹل چلا کر اپنے بچوں کا پیٹ پا لنے والے مقامی لوگ روزگاری سے محروم ہونے کا خدشہ ہے۔

جناب عالی

آپ کی توجہ خصوصی طور پر تھنگ رٹ تھوار کی جانب مبذول کرانا چاہتا ہوں، ہزاروں کنال پر مشتمل یہ زرعی زمین تھوار بالا کے عوام کی ذاتی ملکیت ہے،جہاں عوام قابض و متصرف ہے۔ اس زرعی میدان کا وہ حصہ جو پانی کے قریب تر تھا آباد ہوچکی ہے اور جو پانی سے دور تھا آبادی کے مراحل سے گزر رہا تھا کہ 2018 ء میں ایف ڈبلیو او نے جبری قبضہ کرکے وہاں کرش پلانٹ، اسفالٹ پلانٹ اور سکرینگ پلانٹ نصب کیا ہے اور عوام کی کرورڑوں ملکیت کی مٹیریل مال غنیمت کی طرح سکردو گلگت روڈ پر بلا معاوضہ استعمال کیا ہے، عوامی کوہل کو ختم کر دیا ہے اور ہموار زمینوں کو تہ و بالا کر کے نا قابل کاشت بنا دیا ہے۔ ڈمبواس روندو کے مقام پر ایف ڈبلیو او کا کیمپ ہے، اس کیمپ میں کرنل، میجر، کیپٹن اور صوبیدار تشریف رکھتے ہیں لیکن کوئی بھی عوامی مسائل سننے کو تیار نہیں ہے۔ گیٹ پر موجود سنتریوں کو حکم ہے کہ کسی بھی متاثرہ مقامی شخص کو کیمپ میں داخل ہونے نہ دے۔لب سڑک کام پر موجود بندوق بردار اور باوردی فورمین اور سپر وائرز سے املاک کو نقصان نہ دینے کی منت سماجت کرتے ہیں تو الٹا دھمکی دیتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ہمیں اوپر سے یہی حکم ہے آپ لوگ “سی او ” سے جا کر بات کرو۔ایف ڈبلیو او کے اہلکاروں کا یہ رویہ اور ہٹ دھرمی کسی انسانی سانحے کو جنم دینے کا باعث بن سکتا ہے۔ اس لئے آپ جناب کی توجہ چندعوامی مطالبات کی طرف مبذول کرانا چاہتا ہوں۔

جناب عالی

۱۔ ایف ڈبلیو او کو پابند کیا جائے کہ عوامی ملکیتی زمینوں کو قبضے میں لینے کے بجائے اپنی تمام تر توجہ سکردو روڈ کی تعمیر پر مرکوز کر کے اسے معیاری بنائیں کیونکہ یہ روڈ دنیا کی بلند ترین محاذ جنگ کو رسد پہنچانے کا واحد زمینی راستہ ہے۔

۲۔ایف ڈبلیو او کو پابند کیا جائے کہ وہ مقپون داس گلگت سے حوطوسکردو تک عوامی ملکیتی زمینوں کو فوری طور پر خالی کرے یا عوام سے معاہدہ کر کے روڈ کی تعمیر مکمل ہونے تک اراضی کرایہ پر حاصل کریں تاکہ مستقبل میں کوئی تنازعہ کھڑا نہ ہو۔

۳۔ ایف ڈبلیو او کو ہوٹل اور پیٹرول پمپ بنانے سے فوری روکا جائے تاکہ مقامی بے روزگاروں پر سیاحتی روزگاری کا راستہ بند نہ ہو جائے اور غریبوں کا بھی چولھا جلتا رہے۔

۴۔ ایف ڈبلیو او کو دوران تعمیر روڈ متاثر ہونے والے عوامی راستوں اور کوہلوں کو بحال کرنے کا حکم صادر کیا جائے تاکہ عوام کی نقل و حمل و نظام آب پاشی متاثر نہ رہے۔

۵۔ ایف ڈبلیو او کو حکم صادر کیا جائے کہ وہ تھنگ رٹ تھوارمیں عوامی ملکیتی اراضی پر ظاقت کے بل بوتے پر لگائے گئے کرش پلانٹ، اسفالٹ پلانٹ اور سکریننگ پلانٹ فوری طور پر ہٹا ئے، عوامی زمینوں کو خالی کرے اور عوام کو مٹی بجری اور ریت کا معاوضہ ادا کرے۔ عوامی کوہل کو بنا کر زمینوں کو ہموار کر کے سابقہ حالت میں بحال کرے۔ روڈ کی تعمیر ختم ہونے تک زمین خالی کرنا ممکن نہیں تو عوام سے فوری لیز معاہدہ کرے اور کرایہ ادا کرے۔

منجانب

منظور حسین پروانہ

امید وار گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی روندو

چئیرمین گلگت بلتستان یونائیٹڈ موؤمنٹ

ساکن تھوار روندو ضلع سکردو گلگت بلتستان

فون نمبر 0345-5687751

مورخہ 15 دسمبر2019

کاپی اطلاع

۱۔ ڈائریکٹر جنرل ایف ڈبلیو او

۲۔ وزیر اعظم پاکستان

۳۔ چئرمین NHA

۴۔ فورس کمانڈر ایف سی این اے گلگت بلتستان

۵۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان

۶۔ چیف سکریٹری گلگت بلتستان

۷۔کمشنر بلتستان

۸۔ سی او ایف ڈبلیو او ڈمبوداس کیمپ

۹۔اخبارات

۰۱۔ سوشل میڈیا گروپس

۱۱۔ فائل کاپی

About TNN-ISB

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc