حقوق دو ٹیکس لو،پاکستان کے زیر انتظام متنازعہ خطہ گلگت بلتستان میں غیر قانونی ٹیکسز کی نفاذ کے خلاف سکردو میں بھرپور عوامی احتجاج اور شترڈوان ہڑتال۔

سکردو(تحریر نیوز) انجمن تاجران سکردوکی کال پر پاکستان کے زیر انتظام مسلہ کشمیر سے منسلک متنازعہ خطہ گلگت بلتستان پر گلگت بلتستان کونسل کی جانب سے عائد کردہ غیرقانونی ٹیکسز کے خلاف بھرپور احتجاج کیا گیا۔ مظاہرین کہا کہنا تھا خطے کی آئینی اور قانونی حیثیت کو سامنے رکھتے ہوئے ہر قسم کے غیر قانونی قوانین کو نافذ کرنے کے خلاف بھرپور مزاحمت کریں گے اور گلگت بلتستان کی حیثیت کو واضح کئے بغیر کسی قسم کے ٹیکسز کا نفاذ دراصل چند افراد کی جانب سے اپنی نوکریاں مضبوط کرنے کیلئے غریب عوام پر مسلط کیا جارہا ہے جو کسی بھی صورت عوام کیلئے قابل قبول نہیں۔
مظاہرین کا یہ بھی کہنا تھا کہ جب تک اس خطے کو چاروں صوبوں کے برابری کی بنیاد پرحقوق نہیں ملتے اس قسم کے قوانین کو ریاستی جبر سمجھا جائے گا کیونکہ ایک طرف حکومت پاکستان منتازعہ حیثیت کا بہانہ بنا کر یہاں صنعتیں لگارہے ہیں اور نہ سی پیک میں گلگت بلتستان کے اندر کوئی صنعتی زون قائم کیا جارہا ہےدوسری طرف اس قسم کے جگا ٹیکسز کا نفاذ یہاں کے عوام کے ساتھ زیادتی اور صرف عوام کو لوٹنے کے علاوہ کچھ نہیں ہے ۔ عوام کا مزید کہنا تھا کہ کسی بھی ملک کے شہریوں کو وہاں کی حکومت سہولیات دیتی ہیں لیکن نون لیگ کی حکومت گلگت بلتستان کی حیثیت واضح ہونے کے باوجود یہاں اس قسم کے ٹیکس کا نفاذ کر کے دراصل عوام میں بغاوت کیلئے اُکسا رہے ہیں پاکستان کے فیصلہ ساز اداروں کو اس حوالے سے غور فکر کرنے کی ضرورت ہے۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc