محکمہ خوراک شگر کا انوکھا قانون ،اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے ملازمین کو ترقی دینے کے بجائے تبادلے کرنے لگا ،کو ٹھیالہ شگر کو اچھی کارکردگی کی بناءپر ترقی کے سفارش کرنے کے بجائے روندو تبادلہ کرنے کے لئے پر تولنے لگا ، اس مسلے کو لیکر شگر کے عوام میں غم وغصہ۔

شگر(کرائم رپورٹر) محکمہ خوراک کا انوکھا قانون ،اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے ملازمین کو ترقی دینے کے بجائے تبادلے کرنے لگا ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ خوراک بلتستان ریجن نے کو ٹھیالہ شگر کو اچھی کارکردگی کی بناءپر ان کی ترقی کے سفارش کرنے کے بجائے انہیں روندو تبادلہ کرنے کے لئے پر تولنے لگا ،جس کے باعث شگر کے عوام میں غم وغصہ پایا جاتا ہے ۔محکمہ خوراک کے ذرائع کا کہنا ہے کہ شگر میں گندم اور آٹا سپلائی بہتر انداز میں کرنا نہ صرف کسی کی بس کی بات نہیں تھی بلکہ سیاسی اثر و رسوخ کی بنا پر کئی بار گندم اور آٹا بلیک بھی ہوتے اور پکڑتے میڈیا کی زینت بنتے رہے ہیں تاہم موجودہ کو ٹھیالہ سید حسین شاہ کے شگر تعیناتی کے بعد ہر نظام کو ٹھیک کیا ہوا ہے اور مل کی من مانیاں بھی ختم ہوگئی ہے اور روانہ کی بنیاد پر داخلہ لگارہے ہیں اور کندم کوٹہ بھی باقاعدہ طور پر شگر پہنچ رہا ہے جس کے باعث بحران مکمل طور پر ختم ہوگیا ہے جس کی پاداش میں محکمہ خوارک سکردو کے زمہ دار آفیسر ایک ممبر کے دباو میں آکر ان کے تبادلے کے لئے پر تول رہے ہیں ۔محکمہ خوراک کے ذرائع کا کہنا ہے کہ اگر سید حسین شاہ کا تبادلہ کرایا گیاتو محکمہ خوراک میں من مانیاں کرنے والے ایک پھر آزاد ہوجائیں گے شگر کے عوام نے ڈپٹی ڈائریکٹر بلتستان ریجن سے مطالبہ کیا ہے کہ سید حسین شاہ کو کسی صورت شگر سے تبادلہ نہ کیا جائے ورنہ ہم احتجاج پر مجبور ہوں گے ۔

About admin

اپنی رائے کا اظہار کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

*

apental calc